پی آئی اے نے سینیٹر مشاہداللہ کو کلین چٹ دیدی


اسلام آباد(24نیوز) پی آئی اے نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری کےالزامات کو غلط قرار دیتے ہوئے سینیٹر مشاہد اللہ خان کو کلین چٹ دیدی،  رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مشاہد اللہ خان نے کسی کو بھرتی کرنے کی سفارش نہیں کی۔

مشاہد اللہ خان اور فواد چودھری کی لفظی جنگ میں بآلاخر دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو گیا ۔  سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے ایوی ایشن میں پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائن کی جانب سے رپورٹ پیش کی گئی،رپورٹ مِیں لکھا ہے کہ مشاہد اللہ خان کی سفارش پر قومی ایئر لائن میں کوئی ملازم بھرتی نہیں کیا گیا اور نہ ہی لندن میں لیگی رہنما کی رہائش کے اخراجات پی آئی اے نےبرداشت کیے۔

چیئرمین کمیٹی مشاہد اللہ خان نے بھی وفاقی وزیر اطلاعات کےالزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ فواد چودھری نے ان کے بھائیوں کی تعداد چھ بتائی تھی جبکہ ان کے تو بھائی ہی پانچ ہیں۔

فواد چودھری نےمشاہد اللہ خان پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے پی آئی اے میں اپنے بھائیوں کو بھرتی کیا اور بین الاقوامی اسٹیشنز پر تعینات کروایا۔چیئرمین کمیٹی مشاہد اللہ خان نے رپورٹ کا جائزہ لینے کے بعد کہا کہ وزیراطلاعات کو قابل اعتبار ہونا چاہیے۔ انہوں نے پی ٹی آئی کی سینیٹر ثمینہ سعید کورپورٹ کی کاپی پیش کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنےساتھیوں کو بھی یہ پڑھنے کے لئَے دیں ۔

وقار نیازی(Waqar Niazi)

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔