شہرکراچی میں مرنے کے بعد بھی سکون نہیں۔۔۔

شہرکراچی میں مرنے کے بعد بھی سکون نہیں۔۔۔


کراچی( 24نیوز ) شہر کراچی میں آخری آرام گاہ حاصل کرنا بھی آسان نہیں،شہربھر میں 200 سے زائد قبرستان لیکن جگہ میسر نہیں،شہری اپنے پیاروں کو ندی نالوں کے اطراف میں دفنانے لگے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق شہر کراچی میں مرنے کے بعد مقتول کے لواحقین قبرستانوں میں جگہ ڈھونڈنے کے لئے پریشان ہوتے ہیں ۔ شہر میں200سے زائد قبرستان بھر چکے ہیں اور سالوں سے کوئی نیا قبرستان وجود میں نہیں آیا ہے ۔ لوگوں کی پریشانی کا عالم یہ ہے کہ وہ اپنے پیاروں کو ندی میں دفنانے پر مجبور ہیں ۔

کورنگی روڈ کے نزدیک ملیر ندی کے بیچو بیچ قبرستان دیکھتے دیکھتے آباد ہوگیا ، نہ تو گاڑی جانے کا کوئی راستہ اور نہ ہی پیدل اترنا اتنا آسان لیکن پھر بھی لوگ مجبور ہیں۔ ملیر ندی میں بنا یہ قبرستان ہر سال بارشوں میں ڈوب جاتا ہے اور پھر کچھ دنوں میں پانی سوکھنے کے بعد ریت میں ڈوبا رہتا ہے،  حکومت کی جانب سے نہ تو نئے قبرستانوں کا قیام کیا جارہا اور نہ ہی پرانے والوں کا کوئی پرسانے حال ہے ۔