ملک کو مدینہ منورہ کے ماڈل پر فلاحی ریاست بنانا ہوگا:صدر

ملک کو مدینہ منورہ کے ماڈل پر فلاحی ریاست بنانا ہوگا:صدر


 اسلام آباد( 24نیوز )صدر مملکت عارف علوی نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ملک کو مدینہ منورہ کے ماڈل پر فلاحی ریاست بنانا ہوگا۔
صدر عارف علوی نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ قائد اعظم ؒ عدل و انصاف والا پاکستان چاہتے تھے،ہمارے پاس مدینہ کا ماڈل موجود ہے،اس ماڈل پر عمل کرتے ہوئے ملک کو فلاحی ریاست بنانا ہوگا،پانی کی کمی کو پورا کرنے کیلئے ڈیم ضرور ی ہیں،توقع ہے ہماری حکومت ہر شعبے میں روڈ میپ تیار کرے گی۔
انہوں نے کہا ہے کہ شجر کاری مہم پر خصوصی توجہ دینا ہوگی،ہمیں ملک میں وسائل اور آبادی میں توازن پیدا کرنا ہوگا،خواتین کی ترقی اور زچہ و بچہ کی صحت کے حوالے سے میڈیا اپنا کردار ادا کرے،مدرسے کے طلباءکو مین سٹریم میں لانے کیلئے مدرسوں کے تعلیمی نصاب کو جدید بنانے کی ضرورت ہے۔
واضح رہے مسلم لیگ ن اور ایم ایم اے کے ارکان اسمبلی نے مشترکہ اجلاس سے واک آﺅٹ کرکے صدر کے خطاب کا بائیکاٹ کیا۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا جس کے بعد نعت رسول مقبول ﷺ پیش کی گئی اور پھر بیگم کلثوم نواز کے ایثال ثواب کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔

پارلیمانی سال شروع ہونے پر صدر ڈاکٹر عارف علوی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں حکومت کو پالیسی گائیڈ لائنز دیں گے۔