حکومت نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ کردیا


اسلام آباد(24نیوز) حکومت نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ہے، گیس کی قیمتیں دس سے 143 فیصد تک بڑھا دی گئیں.

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے  نئی قیمتوں کا اعلان  کرتے ہوئے کہا ہے کہ گھریلو صارفین کے لیے اضافہ 10سے 15 فیصد کیا گیا ہے، گھریلو صارفین کیلئے گیس استعمال کے ماہانہ سلیب 3 سے بڑھا کر 7 کر دیئے گئے،   ایل پی جی کے فی سلنڈرقیمت میں 200 روپے تک کمی کی گئی ہے۔

وزیر پیٹرولیم کا کہنا ہے کہ گیس کی قیمت بڑھانے سے 58 ارب روپے کی آمدن ہوگی، انھوں نے بتایا کہ 2013 میں گیس کمپنیاں منافع میں چل رہی تھیں تاہم 2018 میں ان کو 152 ارب روپے خسارے کا سامنا ہے۔انھوں نے کہا  کہ گیس کی قیمت میں زیادہ اضافہ بڑے صارفین کے لیے کیا گیا ہے، انھوں نے گزشتہ حکومت پرتنقید کے  تیر چلاتے ہوئے کہا کہ  پچھلی حکومت نے ایل این جی معاہدہ خفیہ رکھا، جس کی ایف آئی اے اور نیب تحقیقات کررہا ہے۔

گیس کی نئی قیمتوں پر عملدرآمد اکتوبر سے شروع ہوگا جس کی منظوری وفاقی کابینہ دے گی۔

دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا ” گیس کی قیمتوں میں اضافے کا بوجھ 11 فیصد امیر ترین صارفین برداشت کریں گے، غریب صارفین کیلئے گیس کی قیمتوں میں کوئی خاص اضافہ نہیں ہوا، سلنڈر کی قیمت 200 روپے تک کم ہو گئی ہے، 50 ایم ایم ایف گیس کا بل 250 سے بڑھا کر 272 روپے ہو جائے گا۔ پالیسی یہ ہے کہ امیر لوگ سبسڈی کا فائدہ غریبوں کو دیں۔“

واضح رہے کہ وزیر اطلاعات فواد چودھری نے 10ستمبر کو کہا تھا کہ فی الحال گیس مہنگی نہیں کی جائے گی،  وزیراعظم عمران خان کا وژن ہے کہ غریب آدمی پر کسی قسم کا بوجھ نہیں ڈالنا، اس لیے اقتصادی رابطہ کمیٹی نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ سبسڈی کا نظام واضح کیا جائے گا، اس میں تبدیلیاں لائی جائیں گی، تاکہ قیمتوں میں اضافے سے غریب آدمی متاثر نہ ہو۔

 

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔