”یہ تو ہماری ایجاد ہے“بھارت کے ریاستی وزیر اعلیٰ نے بڑا دعویٰ کردیا

”یہ تو ہماری ایجاد ہے“بھارت کے ریاستی وزیر اعلیٰ نے بڑا دعویٰ کردیا


نئی دہلی(ویب ڈیسک)بھارتیوں کا بس چلے تو دنیا کی کسی بھی چیز پر دعویٰ کرسکتے ہیں،دنیا کے کسی بھی خطے کو اپناہونے کا بتا سکتے ہیں،یہ سنا تھا کہ بھارت سرکار کئی دہائیوں سے کشمیر کو اپنا اٹوٹ انگ قرار دیتے آرہی ہے لیکن اسے ثابت نہیں کرسکی ہے،اب تو بھارتی ریاست تری پورہ کے وزیر اعلیٰ نے تو حد ہی کردی ہے۔
قدیم ہندوستان باقی دنیا سے بہت پہلے ٹیکنالوجی کے نئے محاذ پار کر چکا تھا، یہ دعویٰ تو نیا نہیں ہے لیکن پھر بھی ہر نئے ہوشربا ’انکشاف‘ کے بعد سنبھلنے میں تھوڑا وقت تو لگتا ہی ہے تریپورہ کے وزیر اعلیٰ بپلب کمار دیو نے کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ قدیم ہندوستان کی ایجاد ہے اور ہزاروں سال پہلے براہ راست نشریات کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔

یہ بھی پڑھیں :دو سابق امریکی صدور سے جڑا رشتہ دنیا چھوڑ گیا
وزیر اعلیٰ نے کمپیوٹروں کے استعمال پر ایک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مہا بھارت کی جنگ کے دوران سنجے نے دھرت راشٹر کو جنگ کا آنکھوں دیکھا احوال سنایا تھا جس سے ثابت ہوتا ہے کہ اس وقت انٹرنیٹ بھی تھا اور سیٹلائٹ بھی۔خود وزیر اعظم نریندر مودی نے کچھ برس پہلے سائنس دانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ قدیم ہندوستان نے پلاسٹک سرجری پر مہارت حاصل کر لی تھی اس حد تک کہ وہ ایک انسان کے جسم پر ہاتھی کا سر نصب کرنے میں کامیاب ہو گئے تھے۔
یہ سچ ہے یا جھوٹ لیکن اس دعوے پر سوشل میڈیا پرمورچے لگائے بیٹھے پاکستانی ،ہندوستانی فوجیوں نے ”دعویدار“کی خوب درگت بنائی ہے۔