پاکستان کے بیرونی قرضے اور واجبات 97 کھرب روپے تک پہنچ گئے

پاکستان کے بیرونی قرضے اور واجبات 97 کھرب روپے تک پہنچ گئے


کراچی (24نیوز) پاکستان کے بیرونی قرضے اور واجبات 97 کھرب روپے کے قریب پہنچ گئے، سال کے دوران تقریبا 22 فیصد اضافہ ہو گیا، کچھ اضافہ حکومت نے نئے قرضے لے کر کر دیا، تو کچھ روپے کی بے قدری نے بڑھا دیئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کے بیرونی قرضوں اور واجبات کا مجموعی حجم دسمبر کے وسط تک 96 کھرب 74 ارب 41 کروڑ روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا, اسٹیٹ بینک کے مطابق پاکستان کے مجموعی بیرونی قرضوں اور واجبات کا بوجھ ستمبر کے اختتام تک 89 کھرب 66 ارب روپے تھا، تاہم بینک نے یہ حساب ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر 105 روپے 40 پیسے کی شرح سے لگایا تھا، دسمبر کے پہلے ہفتے کے دوران ڈالر کی قیمت 110 روپے 50 پیسے سے بھی تجاوز کر گئی، نئی شرح تبادلہ کے مطابق روپے میں بیرونی قرضے 433 ارب 85 کروڑ روپے کے اضافے سے 94 کھرب روپے سے بھی بڑھ گئے، جبکہ اس دوران حکومت نے 276 ارب 20 کروڑ روپے کے نئے قرضے بھی لے لیے۔

گزشتہ سال نومبر کے اختتام پر بیرونی قرضوں اور واجبات کا حجم 79 کھرب 33 ارب روپے تھا۔