کیسے پارلیمنٹ کی عزت کروں جہاں چوروں کا ٹولہ بیٹھا ہے: عمران خان

کیسے پارلیمنٹ کی عزت کروں جہاں چوروں کا ٹولہ بیٹھا ہے: عمران خان


 اسلام آباد (24 نیوز) چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ یہ پارلیمینٹ چوروں کا تحفظ کر رہی ہے۔ لعنت والا لفظ میں نے بہت ہلکا لفظ استعمال کیا، میں کیسے پارلیمینٹ کی عزت کروں جہاں چوروں کا ٹولہ بیٹھا ہے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ لعنت والا لفظ میں نے بہت ہلکا لفظ استعمال کیا، میں کیسے پارلیمنٹ کی عزت کروں جہاں چوروں کا ٹولہ بیٹھا ہے۔ اسحاق ڈار نے ایک ایک شخص کا نام بتایا ہوا ہے۔ یہ کیسی پارلیمنٹ ہے جہاں وزیراعظم نے جھوٹ بولا؟

انہوں نے مزید کہا کہ نیب کی جانب سے شہباز شریف کو طلب کرنے کا خیر مقدم کرتے ہیں، نیب کسی قسم کا پریشر نہ لے۔ شہباز شریف کے گھپلوں کی تفصیل بھی نیب کو دیں گے۔ ہل میٹل کمپنی نے 116 کروڑ روپے نواز شریف کو بھیجے، یہ تمام دستاویزات ہم نیب کو دے رہے ہیں۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ خواجہ آصف اور نواز شریف جیسے لوگوں نے پارلیمینٹ تباہ کی۔ امریکا میں جا کر خواجہ آصف ٹرمپ کی زبان بولتے ہیں۔ خواجہ آصف پاکستان کے لئے سیکیورٹی رسک ہے۔ ملک کا وزیر خارجہ دبئی کی کمپنی میں کام کر رہا ہے۔ خواجہ آصف اس کمپنی سے 16 لاکھ روپے تنخواہ لے رہا ہے۔ وزیر خارجہ کس منہ سے پاکستان کی نمائندگی کرتا ہے۔ اس پارلیمنٹ نے ایک چور کو پارٹی صدر بننے کا موقع دیا۔ جو شخص جیل میں ہونا چاہئے وہ کہہ رہا ہے مجھے کیوں نکالا؟

شریف خاندان نے منی لانڈرنگ کا پورا نظام بنالیا تھا، یہ پنجاب پولیس سے بھی منی لانڈرنگ کراتے رہے۔ جاتی امرا کا ڈرائیور پنوں 5 کروڑ ایک شخص کو بھیج رہا ہے۔ نواز شریف نے 80 کروڑ مریم نواز کو منتقل کئے، ویٹر کے نام سے بھی رقم منتقل کی جاتی رہی۔ فلیگ شپ کمپنی میں پیسہ جاتا رہا۔

آج شریف خاندان سے متعلق دوسری قسط پیش کر رہا ہوں، یہ کہتے ہیں انہیں اقامہ پر نکالا، بڑا ظلم ہوا۔ پاناما کے بعد انکشاف ہوا نواز شریف کی 16 کمپنیاں تھیں۔ 92 کے بعد شریف خاندان کی دولت میں بے پناہ اضافہ ہوا، حدیبیہ پیپر ملز بھی پیسہ بنانے کے لئے بنائی گئی۔