روپے کی بے قدری کے باوجودسابقہ حکومت کی کامیابی

روپے کی بے قدری کے باوجودسابقہ حکومت کی کامیابی


کراچی( 24نیوز )ملک میں روپے کی قدر کم ہونے کے باوجود گزشتہ مالی سال میں غیرملکی نجی شعبہ کی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے،غیرملکی نجی سرمایہ کاری میں 13فیصداضافہ ہوا۔

63 فیصدسرمایہ کاری چینیوں کی ہے،غیرملکی سرکاری شعبے کی سرمایہ کاری بھی بڑھ،غیرملکی نجی شعبے نے گزشتہ مالی سال کے دوران پاکستان میں پہلے سے 13 فیصد زیادہ سرمایہ کاری کی ہے، مجموعی سرمایہ کاری کا 63 فیصدحصہ چینیوں کا ہے، غیر ملکی سرکاری شعبے کی سرمایہ کاری بھی بڑھ گئی۔

کراچی(  24نیوز  )گزشتہ کئی روز سے روپے کی بے قدری جاری ہے تو ڈالر کی رفتار کم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے، ڈالرمزید 27 پیسے مہنگا ہوگیا، انٹر بینک مارکیٹ میں قیمت 128 روپے 26 پیسے ہوگئی، دو روز میں ڈالر 5.5 فیصد مہنگا ہوچکا۔

یہ بھی خبر پڑھیں۔۔۔ ڈالر نے روپے کو بے توقیر کردیا
اسٹیٹ بینک کےمطابق گزشتہ مالی سال پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاری کا مجموعی حجم 4 ارب 97 کروڑ 74 لاکھ ڈالر رہا، بارہ ماہ کے دوران غیر ملکی نجی شعبے کی طرف سے پاکستان کے صنعتی شعبے میں 2 ارب 76 کروڑ 76 لاکھ ڈالر کی نئی سرمایہ کاری کی گئی،جبکہ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بیرونی سرمایہ کاری سے 24 کروڑ 7 لاکھ ڈالر کا انخلا ہوا۔
اس دوران غیر ملکی سرکاری شعبے کی پاکستانی بانڈز میں سرمایہ کاری کا حجم 2 ارب 45 کروڑ 5 لاکھ ڈالر تک پہنچ گیا،رپورٹ کے مطابق جون سے جولائی تک چینیوں نے پاکستان مین ایک ارب 59 کروڑ 13 ڈالر کی نئی سرمایہ کاری کی، جو نجی غیر ملکی سرمایہ کاری کا 63 فیصد ہے، امریکیوں نے اس دوران اسٹاک مارکیٹ میں 54 کروڑ 52 لاکھ ڈالر لگائے۔