ابھی بہت گرفتاریاں ہونی ہیں:وزیر داخلہ



کراچی ( 24نیوز )وفاقی وزیر داخلہ بریگڈیئر (ر)سید اعجاز شاہ بخاری کا کہنا ہےکہ سیاستدانوں کی گرفتاریوں کا حکم بنی گالا سے نہیں ، نیب راولپنڈی سے ملتا ہے۔ وہ میرے پڑوس میں ہیں وہ چاہتے ہیں سب کرپٹ لوگوں کو فوری طور گرفتار کیا جائے ،بہت سی گرفتاریاں ہونی ہیں لیکن نیب پر بوجھ بڑا ہے تحقیقات کیلئے وسائل کم ہیں۔

وفاقی وزیر داخلہ سید اعجاز شاہ کی زیر صدارت سندھ میں امن امان کی صورتحال سے متعلق گورنر ہائوس میں اجلاس ہوا جس میں امن امان کی مجموعی صورتحال کا جائزہ لیا گیا ۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کے دوران سوالات کے جوابات دیتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ سیاستدانوں کی گرفتاریوں کا حکم بنی گالا سے نہیں نیب راولپنڈی سے ملتا ہے ،ہاں وہ میرے پڑوس میں ہیں وہ چاہتے ہیں سب کو فوری طور پرگرفتار کیا جائے، گرفتاریاں بہت ہونی ہیں لیکن بوجھ بڑا ہے ۔

وزیر داخلہ نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کے آصف علی زرداری نے ایک جملے میں بات ختم کردی تھی ،کہا تھا ایسا تو ہوتا ہے ایسے کاموں میں ایسے کام کریں گےتو گرفتار بھی ہوں گے۔

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کے اگر مجھ پر بینظیر بھٹو کے قتل کا الزام ہے تو بلاول کے والد کی چار سال حکومت تھی مجھے سزا دلوا دیتا ۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer