شہریوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ عدلیہ کی ذمہ داری ہے:میاں ثاقب نثار


لاہور(24نیوز): چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ لوگوں کو بنیادی حقوق دلوانا فرائض میں شامل ہے، شہریوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ عدلیہ کی ذمہ داری ہے، بنیادی حقوق نہ ملنے سے معاشرے میں خرابیاں پیدا ہو رہی ہیں۔ شہریوں کو بھی اپنے بنیادی حقوق کاعلم نہیں، چیف جسٹس نے جسٹس ریٹائرڈ فضل کریم کی کتاب کی تقریب رونمائی سے خطاب کیا۔

جسٹس ریٹائرڈفضل کریم کی کتاب جوڈیشل ریویوآف پبلک ایکشن کےدوسرے ایڈیشن کی رونمائی تقریب کااہتمام جی او آرون کے آفیسرزمیس میں کیا گیا، چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثارنے کہا کہ لوگوں کو بنیادی حقوق کی فراہمی ایگزیکٹو کی ذمہ داری ہے، اگرعدالتیں شہریوں کو بنیادی حقوق کےتحفظ کے لیے اپنے فرائض سرانجام دیتی ہیں تو کہاجاتا ہے کہ مداخلت کی جا رہی ہے، چیف جسٹس پاکستان نے جسٹس ریٹائرڈ فضل کریم کی عدلیہ کیلئے خدمات کوخراج تحسین پیش کیا، تقریب میں سپریم کورٹ کے سینئر ترین جج آصف سعید کھوسہ، جسٹس ریٹائرڈ ناصرہ اقبال،بیرسٹرعلی ظفر،ڈاکٹراسامہ صدیق اورپروفیسر مارٹن لیو نے بھی اظہارخیال کیا، چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ محمدیاورعلی،سپریم کورٹ کےجسٹس عمرعطاء بندیال،جسٹس منظور احمد ملک،جسٹس اعجازالاحسن، جسٹس سید منصورعلی شاہ بھی شریک ہوئے،لاہور ہائیکورٹ کے سینئرترین جج جسٹس محمد انوارالحق،جسٹس مامون الرشید شیخ،جسٹس محمد فرخ عرفان خان،جسٹس محمد قاسم خان،جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی، جسٹس محمد امیر بھٹی، جسٹس عائشہ اے ملک، جسٹس شاہد کریم، جسٹس شاہد حیدر، جسٹس عاطر محمود، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس جواد حسن، جسٹس شہرام سرور چودھری، جسٹس طارق سلیم شیخ، جسٹس علی اکبرقریشی، جسٹس اسجدجاوید گورال سمیت دیگرججز نے شرکت کی۔

رجسٹرار ہائیکورٹ بہادرعلی خان، چیئرمین فیڈرل سروس ٹربیونل جسٹس ریٹائرڈ سید زاہد حسین، سابق چیف جسٹس ہائیکورٹ خلیل الرحمان خان، سابق صدرسپریم کورٹ بارحامد خان، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل شان گل،ظفر اقبال کلانوری ایڈووکیٹ،سرفراز حسین چیمہ سمیت دیگرسینئر وکلاء کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔