فاٹا اصلاحات پر30ویں آئینی ترمیم کا بل قومی اسمبلی میں پیش نہ ہو سکا


 24نیوز: فاٹا اصلاحات پر30ویں آئینی ترمیم قومی اسمبلی میں پیش نہ کی جاسکی، تحریک انصاف کےرہنما شاہ محمود قریشی کہا ہے کہ یہ بل ناکافی ہے، یہ فاٹا کے عوام کے ساتھ دھوکا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق فاٹا اصلاحات اور انضمام سے متعلق حکومتی بل پر اتحادی جماعتوں جمعیت علمائے اسلام ف اور پختونخوملی عوامی پارٹی کے ساتھ ساتھ تحریک انصاف نے بھی تحفظات کا اظہار کردیا۔ تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی کا کہنا ہےکہ حکومتی بل جو ہمیں دکھایا گیا وہ قبول نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:نگران وزیر اعظم کا اعلان منگل کو ہوگا

 شاہ محمودقریشی کا کہنا ہےکہ چیرمین عمران خان سے مشاورت کے بعد تجاویز سپیکر ایاز صادق کے حوالے کی ہیں۔ کل فاٹا بل پرہونے والی پیش رفت پر بات کریں گے۔ ایف سی آر کا خاتمہ، اصلاحات اور فاٹا کا خیبرپختونخوا میں انضمام چاہتےہیں۔تحریک انصاف اور اتحادی جماعتوں کے تحفظات اور دیگر مسائل کے باعث بل ایوان میں پیش نہیں کیا جاسکا۔ حکومت کی جانب سے 30 ویں آئینی ترمیم پیر یا منگل کے روز پیش کئے جانے کا امکان ہے۔

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito