وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے استعفے پر اپوزیشن کا شدید ردعمل

وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے استعفے پر اپوزیشن کا شدید ردعمل


(24 نیوز): منی لانڈرنگ میں ملوث وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے استعفیٰ پر اپوزیشن جماعتوں نے شدید ردعمل کا اظہار کیا، شیخ رشید کہتے ہیں کہ اسحاق ڈار کو یہ کام بہت پہلے کرنا چاہیئے تھا، سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ حکومت اپنے جرم چھپانے کے لئے نیا وزیر خزانہ نہیں لگا رہی۔

ذرائع کے مطابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا استعفیٰ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو موصول ہوگیا، حتمی فیصلہ مسلم لیگ نون کے  صدر اور سابق وزیراعظم نوازشریف کریں گے۔

اسحاق ڈار نے استعفے کیا دیا، سیاسی مخالفین کے ہاتھ تنقید کا موقع آگیا، 24 نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ عوام کی دولت لوٹنے والوں کو ہتھکڑیاں لگنی چاہئیں، انہوں نے کہا کہ نیب کے بیماروں کے لئے پاکستان میں الگ اسپتال ہونا چاہئے۔

پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیٹر سلیم مانڈوی والا کا کہنا تھا کہ جس شخص پر کرپشن کے الزامات ہوں اسے سرکاری عہدہ رکھنا ہی نہیں چاہیئے، نون لیگ کے سارے وزراء اقامہ والے ہیں، ایسے حالات میں ملک کیسے چل سکتا ہے۔

تحریک انصاف کے رہنما فواد چودھری نے بھی خوب دل کی بھڑاس نکالی، کہتے ہیں اسحاق ڈار خود اتنے بیمار نہیں جتنا انہوں نے ملکی معیشت کو بیمار کیا، کہنے لگے حیران ہوں قوم کا مجرم بیرون ملک کیسے گیا؟۔

ذرائع نے بتایا کہ اسحاق ڈار کا استعفیٰ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو موصول ہوچکا ہے، لیکن استعفے کی منظوری کا فیصلہ پارٹی سے مشاورت کے بعد کیا جائے گا۔