پیپلز پارٹی کے رہنما خورشیدشاہ گرفتار

پیپلز پارٹی کے رہنما خورشیدشاہ گرفتار


اسلام آباد(24نیوز) نیب نے پیپلز پارٹی کے اہم اور سینئر رہنما سید خورشید شاہ کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو( نیب )  سکھراورراولپنڈی نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے رہنماپیپلزپارٹی خورشیدشاہ کو اسلام آباد میں ان کی رہائش گاہ بنی گالہ سے گرفتار  کرلیا ہے۔ ان کوآمدن سےزائداثاثوں کے الزام میں گرفتارکیا گیاہے۔ نیب نے خورشید شاہ کو آمدن سے زائد اثاثوں کے کیس کیلئے آج طلب کیا تھا۔ خورشید شاہ نے قومی اسمبلی اجلاس میں شرکت کی وجہ سے نیب کو خط لکھ کر آج پیش ہونے سے معذرت کی تھی۔ 

یاد رہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری ، انکی ہمشیرہ فریال تالپور، پیپلز پارٹی رہنما سراج درانی، شرجیل میمن پہلے ہی نیب کے زیر حراست ہیں۔

رہنما پیپلز پارٹی خورشید شاہ نے گرفتاری سے قبل پارلیمنٹ ہاوس میں میڈیا سے گفتگو کرتےہوئے کہاکہ موجودہ حالات میں حکومت مزید نہیں چل سکتی۔ لاک ڈاون سے متعلق پیپلز پارٹی عوامی امنگوں کے مطابق فیصلہ کرے گی۔ابھی دلی دور است ہے،  پیپلز پارٹی بہتر فیصلہ کرے گی۔حکومت خود حالات ایسے پیدا کر رہی، جو اتفاق نہیں وہ ہو بھی جائے گا۔ ہماری کوشش ہے پارلیمنٹ 5 سال پورے کرے۔ کیسے پورا کرے گی یہ بیٹھ کر سب کو سوچنا چاہیے۔آئین کے آرٹیکل 149 کا کچرے پر استعمال نہیں ہو سکتا۔وفاقی حکومت صوبائی حکومت کی مدد کرے۔

وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی خورشیدشاہ کی گرفتاری پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ خورشید شاہ کو گرفتار کر کے حکومت نے غلط قدم اٹھایا ہے۔کیاوہ کہیں بھاگے جا رہے تھے؟

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔