مراد علی شاہ کی وزیراعظم ہاؤس کو گھیرا ڈالنے کیلئے اپوزیشن جماعتوں کو دعوت


کراچی(24نیوز) وزیراعلی سندھ نے لوڈشیڈنگ کے معاملے پر اپوزیشن جماعتوں کو مل کر وزیراعظم ہاؤس کے سامنے دھرنے کی دعوت دے دی، مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کو کراچی کی پرواہ نہیں، اندرونِ سندھ کراچی سے بھی ذیادہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے، جو صوبہ گیس پیدا کررہا ہے اسے ہی نہیں دی جارہی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سمیت سندھ بھر میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ پر وزیراعلی سندھ بھی بول پڑے۔ سندھ اسمبلی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ پر وفاقی حکومت کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔ مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ بجلی کی لوڈشیڈنگ کے مسئلے پر میں نے 6 مرتبہ وزیراعظم سے فون پر بات کی۔ مسئلہ سوئی سدرن گیس کمپنی کا ہے جو مطلوبہ مقدار میں گیس نہیں دے رہا۔73 فیصد ایس ایس جی سی وفاقی حکومت کے پاس ہے لیکن اس کے باوجود وفاق خاموش ہے۔

وزیراعلی سندھ نے مزید بتایا کہ کراچی سے زیادہ بُرا حال اندرونِ سندھ کا ہے جہاں 14 سے 22 گھنٹے بجلی غائب رہتی ہے۔ میرے حلقہ سیہون میں 18 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔علاوہ ازیں وزیراعلی سندھ نے سیاسی جماعتوں کی جانب سے احتجاج اور دھرنوں کے حوالے سے بڑی دعوت دے ڈالی۔ مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ ہاؤس کے سامنا دھرنا دینے سے کیا ہوگا۔ سارے معاملات آپ کے سامنے رکھ دیئے۔ سب پارٹیوں کو دعوت دیتا ہوں کہ چلو اسلام آباد میں دھرنا دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:نریندرمودی سزا کا حقدار،دینا میں بھارت کو جمہوریہ خوف قرار دے دیا گیا 

 واضح رہے کہ وزیراعلیٰ نے اپنے صوبے کا کیس سامنے رکھتے ہوئے بتایا کہ سندھ سب سے زیادہ معدنی ذخائر دیتا ہے لیکن اس کا فائدہ نہیں پہنچتا۔سندھ کے ساتھ دشمنی کی جارہی ہے۔