دل کے ٹکڑے  ہزار ہوئے، کوئی کہاں گرا، کوئی کہاں گرا

 دل کے ٹکڑے  ہزار ہوئے، کوئی کہاں گرا، کوئی کہاں گرا


سکھر (24نیوز)پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ دل کے ٹکڑے  ہزار ہوئے، کوئی کہاں گرا، کوئی کہاں گرا.حفیظ شیخ پیپلزپارٹی کے وزیر خزانہ تھے. اس سے ثابت ہوا حکومت کو پیپلز پارٹی کی ضرورت پڑی ہے.

انہوں نےکابینہ تبدیلی پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ مختلف پارٹیوں کو جمع کرکے پی ٹی آئی کا وجود عمل میں لایا گیا. اس حکومت میں حکمران محفوظ نہیں ہیں. ہم نے لوگوں کو روزگار دیا، ان لوگوں نے نکال دیا،بجلی گیس کی قیمتوں میں جس طرح اضافہ کیا گیا ہے تو اب ڈر ہے لوگ بجلی خریدنا نہ چھوڑ دیں.

انہوں نے کہا ہے کہ عمران خان سے مولانا فضل الرحمنٰ کا استعفیٰ کا مطالبہ صحیح ہے،ان ہاوس تبدیلی بھی ہوسکتی ہے،ملکی معیشت کی بہتری کے لیے مل بیٹھنے کی ضرورت ہے،حالات کی بھتری صرف پارلیمنٹ میں ہے.

نواز شریف کو بھی کہتے تھے پارلیمنٹ میں آئیں مگر وہ نہیں آئے. نواز شریف نے پارلیمنٹ کی بالادستی تسلیم نہیں کی. مولانا فضل الرحمٰن ٹھیک کہتے ہیں عمران خان ناکامی کا اعتراف کریں، اب ہماری کیا عمر رہ گئی ہے،لوگ نام کے لیے کام کرتے ہیں، عمران خان کو ناکامی کا اعتراف کرنا چاہئے،جو حکومتیں معیشت کی وجہ سے ختم ہوتی ہیں وہاں انارکی کا خطرہ ہوتا ہے، اگر تبدیلی ہو بھی تو ان ہاوس ہو۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer