پنجاب ن لیگ کے ہاتھوں سے نکل گیا

پنجاب ن لیگ کے ہاتھوں سے نکل گیا


لاہور(24نیوز)عثمان بزدار  وزیر اعلیٰ پنجاب منتخب ، پی ٹی آئی کے عثمان بزدار اور ن لیگ کے حمزہ شہباز ہیں مدمقابل تھے، پیپلزپارٹی نے وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب  سے لاتعلقی کا اظہار کردیا۔
تفصیلات کے مطابقعثمان بزدار  وزیر اعلیٰ پنجاب منتخب ہو گئے۔  پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کو تحریک انصاف اور مسلم لیگ ق کے مشترکہ امیدوار سردار عثمان بزادر کے کاغذات بطور امیدوار وزیر اعلیٰ موصول ہوئے جبکہ ان کے مقابلہ میں مسلم لیگ ن کے امیدوار میاں حمزہ شہباز شریف کے کاغذات میاں مجتبیٰ شجاع الرحمان کی وساطت سے جمع کروائے گئے تھے ۔ جس پر سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہی کی جانب سے جانچ پڑتال کے بعد انہیں منظور کر لیا گیا  تھا۔ اس موقع پر میاں مجتبیٰ شجاع الرحمان کا کہنا تھا کہ وہ سردار عثمان کے کاغذات پر اعتراض لگانا چاہتے تھے ۔
واضح رہے کہ عثمان بزدار  186 وٹوں سے برتری لے گئے جبکی حمزہ شہباز کو 159 ووٹ ملے۔دوسری جانب اعتراضات کے معاملہ پر سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہیٰ کا کہنا تھا  کہ مسلم لیگ ن کی جانب سے وقت گزر جانے کے بعد اعتراض لگانے کی زبانی بات کی گئی ہے جس پر انہیں بتایا گیا ہے کہ اعتراضات کا وقت ختم ہو چکا ہے ۔ دوسری جانب نامزد وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان کا کہنا تھا کہ ان کے خلاف کوئی کیسز نہیں چل رہے  وہ عمران خان کے اعتماد پر پورا اتریں گے ۔