”بس بہت ہوگیا“وزیر اعلیٰ سندھ انےپولیس کو دو ٹوک حکم دے دیا

”بس بہت ہوگیا“وزیر اعلیٰ سندھ انےپولیس کو دو ٹوک حکم دے دیا


کراچی( 24نیوز )سندھ میں وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نے تبدیلی کا آغاز کردیا، چھٹی کے روز بھی ایکشن میں آگئے،سٹریٹ کرائم پر قابو پانے کیلئے پولیس کے سربراہان کو دو ٹوک کہہ دیا، بس بہت ہوگیا مجھے شہریوں کی جان و مال کا تحفظ چاہئے۔
سندھ کے 29 ویں وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ نے عہدہ سنبھالتے ہی وقت کی قدرشروع کردی، صبح ساڑے 8 بجے وزیر اعلی ہاﺅس پہنچے انہیں گارڈ آف آنر بھی دیا گیا ،وزیراعلیٰ کی زیر صدارت امن وامان سے متعلق پہلا اجلاس 9 بجے شروع ہوا ،اجلاس میں اسٹریٹ کرائم اور امن امان سے متعلق آئی جی سندھ امجد سلیمی نے بریفنگ دی ۔
آئی جی سندھ نے کہا کہ سندھ میں پولیس اہلکاروں کی کمی کا سامنا ہے آبادی کے لحاظ سے نفری کم ہے ،پولیس نظام میں اصلاحات لانے کی سخت ضرورت ہے۔
کراچی پولیس کے چیف ڈاکٹر امیر علی شیخ پیٹی بند بھائیوں کے خلاف بول پڑے اور کہا کہ محکمے میں کالی بھیڑیں موجود ہیں انہی سے کام نکالنا ہے اگر نہ نکلا تو کارروائی کریں گے ،اجلاس میں سندھ پولیس میں اصلاحات کے لیے سیکریٹری داخلہ کی سربراہی میں تین رکنی کمیٹی قائم کردی گئی ،، کمیٹی میں شامل آئی جی سندھ اور ایڈیشنل آئی جی کراچی پولیس میں اصلاحات کے حوالے سے سفارشات مرتب کریں گے۔
سندھ پولیس کے لیے شادی امداد کی رقم دس ہزار سے بڑھا کر ایک لاکھ روپے کرنے بھی اعلان کیا گیا وزیراعلی نے سندھ میں پولیس اسٹیشنز کی ابتر صورتحال پر آئی جی سندھ سے رپورٹ طلب کرلی،مراد علی شاہ نے کہا کے عید الالضحٰی کے دوران بھی امن امان کی صورتحال کو یقینی بنایا جائے انہوں نے کہاکہ اب بہت ہوگیا عوام کا پولیس پر اعتماد بحال کرانا چاہتے ہیں ۔