متحدہ رہنماوں کا کے کے ایف کو کروڑوں روپے دینے کا اعتراف:ایف آئی اے


کراچی(24نیوز) بانی ایم کیو ایم کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات جاری،متحدہ کے رہنمائوں نے ایف ائی اے کے سامنے خدمت خلق فائونڈیشن کو کروڑوں روپے دینے کا اعتراف کرلیا، خدمت خلق فائونڈیشن میں جمع 200کروڑ سے زائد کی رقم منی لانڈرنگ کے ذریعے لندن منتقل ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق بانی ایم کیو ایم کے خلاف منی لانڈرنگ سے متعلق کیس کی تحقیقات جاری ہیں۔ ایم کیو ایم رہنما ڈاکٹر صغیر، کیفل وارا، محمد شاہد، محمد زبیر، محمد طاہر، منظور احمد، روف مغل،محمد عمران، رفیق راجپوت اور کمال صدیقی ایف آئی اے ہیڈکوارٹرز میں پیش ہوئے۔ ذرائع کے مطابق محمد شاہد نے 1 سال میں ایک کروڑ 40 لاکھ، ڈاکٹر صغیر نے ساڑھے 16 لاکھ خدمت خلق فائونڈیشن کے اکائونٹ میں جمع کرائے۔

 ایف آئی اے ذرائع کے مطابق خدمت خلق فاونڈیشن میں جمع 200 کروڑ سے زائد کی رقم منی لانڈرنگ کے ذریعے ایم کیو ایم لندن سیکریٹریٹ منتقل ہوئی۔  لندن منتقل کی جانے والی رقوم منفی سرگرمیوں کیلئے استعمال کی گئیں۔ ایف آئی اے نے آئیندہ ہفتے فاروق ستار سمیت مزید 10 اہم شخصیات کو طلب کیا ہے۔جبکہ گزشتہ سال کراچی میں منی لانڈرنگ کا درج مقدمہ ایف آئی اے کاونٹر ٹیررزم ونگ اسلام آباد کو ٹرانسفر کیا گیاہے۔