تعلیم مہنگی کے ساتھ بھاری بھی ہو گئی


اسلام آباد(24نیوز) بچے مستقبل کے معمار،جوبھاری بیگ کے بوجھ تلے دبے ہیں، بوجھل بستے اٹھانے سے بچے ریڑھ کی ہڈی کی تکلیف سمیت مختلف بیماریوں کا شکار ہونے لگے۔

تفصیلات کے مطابق ترقی یافتہ ممالک میں بچوں کی بہتر نشو نما کے لیئے ان کو صرف ایک پین ایک کھلونا اور ایک کتاب دی جاتی ہے تو دوسری جانب ترقی کے دوڑ میں تیزی سے گامزن ہوتے پاکستان بچے اپنے وزن سے بھی زیادہ بھاری بھرکم بیگ اٹھانے پر مجبور ہیں جو نہ صرف تکلیف کا باعث ہے اور بچوں کی ذہنی نشونما میں بھی رکاوٹ ڈالتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:گرمیوں کی چھٹیاں کب ہونگی؟ محکمہ تعلیم نے بڑا اعلان کر دیا 

 ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ وزنی اسکول بیگ اٹھانے سے بچوں میں ریڑھ کی ہڈی اور کندھے کے درد کے علاوہ ہڈیوں کا ٹیڑہا پن جیسی مختلف بیماریاں جنم لیتی ہیں۔دوسری جانب ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ وزنی بیگ سے نہ صرف بچوں کا بدن متاثر ہوتا ہے بلکہ انکا ذہن بھی متاثر ہوتا ہے۔ جس کے باعث تعلیم پر بھی فرق پڑتا ہے۔