نندی پور پاور پروجیکٹ،بابر اعوان اور نیب پراسیکوٹر کے مابین تلخ کلامی

نندی پور پاور پروجیکٹ،بابر اعوان اور نیب پراسیکوٹر کے مابین تلخ کلامی


اسلام آباد(24نیوز) نندی پور پاور پروجیکٹ ریفرنس کی سماعت کےدوران بابر اعوان اور نیب پراسیکوٹر کے درمیان تلخ کلامی ہوگئی،بابر اعوان بولے کہ نیب سیاست کیوں کررہا ہے؟۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت اسلام آباد کے جج ارشد ملک نے نندی پورپاورپراجیکٹ ریفرنس کی سماعت کی، راجہ پرویز اشرف ، سابق جوائنٹ سیکرٹری ریاض محمود اورسابق سیکرٹری شاہد رفیع کی غیرحاضری پرعدالت نے برہمی کا اظہارکیا،گواہ محمدنعیم نے ریکارڈ اکٹھا کرنے کیلئے مہلت کی استدعا کی،بابراعوان نے دلائل دئیے کہ یہ سیلاب کا کیس نہیں جوریکارڈ مظفرگڑھ سے لانا ہے۔

نیب پراسیکوٹر نے کیس کے گواہ خواجہ آصف یا نوید قمرکوبیان قلم بندکرانے کی استدعا کی تو بابراعوان نے کہاکہ نیب سیاست کررہی ہے، جس کےبعد بابر اعوان اور نیب پراسیکوٹر کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا،بابراعوان بولے کہ خواجہ آصف نیب کے ملزم اور نویدقمرقیدی رہے،بلا لیں انکے پاس جوسانپ ہے وہ بھی نکال لیں۔

نیب پراسیکوٹر نے بابر اعوان کے دلائل کو جلسہ سے خطاب قراردیا،تو بابر اعوان کے منشی محمدشبیرنے نیب پراسیکوٹرپر سخت جملے کسے، جس پرجج ارشد ملک نے سرزنش کی، بعد ازاں عدالت نے آئندہ سماعت 21 مارچ تک ملتوی کردی۔