مستقبل مریم نواز اور بلاول بھٹو کا ہے،دونوں حکومت کرینگے

مستقبل مریم نواز اور بلاول بھٹو کا ہے،دونوں حکومت کرینگے


لاہور(24نیوز) معروف صحافی اور سابق چئیرمین پی سی بی نجم سیٹھی کا کہنا ہے کہ مستقبل میں مریم نواز اور بلاول بھٹو کا وقت آئے گا کیونکہ آج کل کا نوجوان طبقہ ایسے ہی لیڈروں کو پسند کرتا ہے۔دونوں کی پرسنالٹی بھی بہت اچھی ہے۔دونوں باری باری  پاکستان  پر حکومت کریں گے۔ پہلے مریم نواز کی باری آئے گی  اور اگر وہ فیل ہو گئیں تو پھر بلاول بھٹو آئیں گے۔

انہوں  نے24 نیوز کے پروگرام ’’نجم سیٹھی شو‘‘میں گفتگو کرتے ہوئے  مزید کہا کہ مریم نوازاوربلاول بھٹو کےہاتھ میں لکھا ہے کہ ان دونوں ملک کی قیادت کرینگے، انکوکوئی روک نہیں سکتا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ہے کہ ابھی مریم نواز اور بلاول کا وقت نہیں آیا ہے،ابھی تو عمران خان صاحب کا دور ہے اگر وہ ناکام ہوتے ہیں تو اگر کسی کی باری بنتی ہے تو شہبازشریف کا رول نظر آتا ہے اگر لانگ ٹرم کیلئے دیکھا جائے تو اسٹیبلشمنٹ ایسے سیاست کو مینیج نہیں کرپائے گی۔

میرے خیال میں مریم نواز کا مستقبل ہے،یہاں کا کلچر بھی  ہے کہ خواتین کو لوگ پسند کرتے ہیں،میاں شہباز شریف ن لیگ کیلئے پرائمری چوائس ہوسکتے ہیں لیکن لانگ ٹرم کیلئے ایسا نہیں ہے۔

خیال رہے بلاول بھٹو اور مریم نواز دونوں سیاسی خاندان سے تعلق رکھتے ہیں۔مریم نواز گذشتہ سال انتخابات میں حصہ نہیں لے سکیں تاہم وہ گذشتہ سال وہ ایک لیڈر کے طور پر بن کر ابھری ہیں اور وہ جیل ہونے سے قبل اپنے والد کے ہمراہ جلسوں میں شرکت بھی کرتی رہیں ہیں جب کہ لوگوں کی بڑی تعداد بھیمریم نواز کو پسند کرتی ہے اور امید ظاہر کرتی ہے کہ مستقبل میں وہ وزیراعظم بنیں گی۔ 

جب کہ دوسری طرف بینظیر بھٹو کے صاحبزادے بلاول بھٹو پہلی مرتبہ قومی اسمبلی کے رکن بنے ہیں۔ این اے 200 لاڑکانہ سے بلاول بھٹو نے ایم کیوایم کے راشد سومرو کو شکست دی۔ایک میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ پاکستان  پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین بلاول بھٹو زرداری این اے 200 لاڑکانہ سے فاتح قرار پا گئے ہیں۔بینظیر بھٹو اور آصف علی زرادری کے صاحبزادے اور پاکستان  پیپلز پارٹی کے چئیرمین پہلی مرتبہ رکن قومی اسمبلی منتخب ہوکر ایوان کا حصہ بنے۔این اے 200 لاڑکانہ میں بلاول بھٹو زرداری کا حلقہ انکا آبائی حلقہ تھا اور اسی حلقے سے انکے نانا ذولفقار علی بھٹو اور انکی والدہ بینظیر بھٹو فتح یاب ہوکر وزیر اعظم بنے تھے۔بلاول بھٹو نے اس حلقے سے 84 ہزار 420 ووٹ حاصل کیے تھے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer