60 چھوٹے ہیپاٹائٹس کلینکس فعال کیے گئے ہیں: وزیراعلیٰ پنجاب

60 چھوٹے ہیپاٹائٹس کلینکس فعال کیے گئے ہیں: وزیراعلیٰ پنجاب


لاہور(24نیوز):وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف کی زیرصدارت اجلاس۔ کہتے ہیں کہ محکمہ پرائمری و سکینڈری ہیلتھ کیئرکی استعداد کار بڑھانے کیلئے اقدامات کیے جائیں ،ہسپتالوں کے میڈیکل سپریٹنڈنٹس کیلئے مینجمنٹ کورس کا پلان مرتب کر کے پیش کیا جائے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کی زیرصدارت ویڈ یولنک کے ذریعے اجلاس ہوا۔انہوں نے کہا کہ اب تک 15ہزار مریضوں کو ادویات ان کے گھروں میں پہنچائی گئی ہیں،جون 2018ء تک ہیپاٹائٹس کے 1 لاکھ مریضوں کو انکے گھروں پرادویات کی فراہمی کا ہدف پورا کرینگے،ٹی بی کنٹرول پروگرام کے تحت 5 ہزار مریضوں کو مفت ادویات انکے گھروں پر مہیا کی جاچکی ہیں ۔انہوں نےکہاکہ ہیپاٹائٹس کی روک تھا م کیلئے ہیپاٹائٹس کنٹرول آرڈیننس کا اجراء کیا گیا ہے، میاں شہبازشریف نے کہا کہ آرڈیننس کے نفاذ اوراس پر عملدر آمدکو یقینی بنایا جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کی سطح پر 60چھوٹے ہیپاٹائٹس کلینکس فعال کیے گئے ہیں،انہوں نےہیپاٹائٹس کی روک تھام اورعلاج معالجے کے حوالے سے عوام میں آگاہی پیدا کرنے کیلئے بھر پور مہم چلانے کی بھی ہدایت کی۔ انہوں نےکہاکہ صوبے کے 40ہسپتالوں میں اصلاحات کا عمل تکمیل کے آخری مراحل میں ہے۔ 14مزید بڑے موبائل ہیلتھ یونٹس جبکہ 20چھوٹے یونٹس جلد فنکشنل ہوں گے،دوسرے مرحلے میں مزید 85ہسپتالوں میں اصلاحات لائی جائیں گی۔

شہبازشریف نے کہا کہ صوبے کے تمام اضلاع میں سی ٹی سکین مشینوں کی فراہمی کے پروگرام کو بھی تیزی سے آگے بڑھایا جارہاہے،ادویات کی خریداری ،ترسیل اورفراہمی کا ڈیجیٹل نظام بنایاگیا ہے ۔سیکرٹری پرائمری و سکینڈری ہیلتھ کیئر علی جان خان نے بریفنگ دیتےہوئےکہاکہ ہیپاٹائٹس کی روک تھام کیلئے ہیرسیلون،بیوٹی پارلرز اورباربرز کی رجسٹریشن کا عمل جاری ہے ۔اجلاس میں صوبائی وزیرصحت خواجہ عمران نذیرسمیت اعلی حکام اورمتعلقہ افسران نے سول سیکرٹریٹ سے ویڈیو لنک کے ذریعےشرکت کی۔