پاک بھارت میچ کا بے صبری سے انتظار،شائقین کی نظریں گھڑی پر ٹک گئیں

پاک بھارت میچ کا بے صبری سے انتظار،شائقین کی نظریں گھڑی پر ٹک گئیں


دبئی(24نیوز) ایشیا کپ ٹورنامنٹ میں انتظارکی گھڑیاں ختم ہونےلگیں، دنیائے کرکٹ کاسب بڑااوردلچسپ ٹاکرا آج ہوگا۔ پاکستانی شاہین اوربھارتی سورمادبئی کے میدان میں کرکٹ کی جنگ لڑیں گے۔

پاکستان اور بھارت کہیں بھی کرکٹ کھیلیں دنیا بھر کی نظریں اسی میدان پرجم جاتی ہیں۔دبئی کےمیدان میں کل ایک بار پھرروایتی حریف ٹکرائیں گے۔ متحدہ عرب امارات پاک بھارت مقابلوں کااہم مرکزسمجھاجاتاہے۔شارجہ کامیدان کئی بارروایتی حریفوں کےمیچ کی میزبانی کرچکاہے۔دونوں ٹیمیں یواےای میں آخری بار 2006میں مدمقابل آئیں تھیں۔جب ابوظہبی میں دو ون ڈے میچوں میں دونوں حریف سامنے آئے تھے۔

پاکستان اور انڈیا کے مابین آخری میچ ایک سال قبل لندن کے اوول کے میدان پر کھیلا گیا تھا جب پاکستان نے چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل میں انڈیا کو 158 رنز سے شکست دے کر تاریخی فتح حاصل کی تھی۔

ایشیا کپ کے فارمیٹ کو دیکھ کر لگتا ہے کہ جیسے یہ صرف ان دونوں ممالک کو ایک ساتھ کھیلتے ہوئے دیکھنے کا بہانہ ہو۔کرکٹ کے شائقین چاہے کہیں کےبھی ہوں پاک بھارت میچوں کی انفرادیت اچھی طرح سمجھتے ہیں۔دوسرے ملکوں سے بھی شائقین اس میچ کے لیے دبئی پہنچ رہے ہیں کیونکہ وہ دنیائے کرکٹ کے سب سے بڑے اور سب سے دلچسپ ٹاکرے کو دیکھنے کا موقع ہاتھ سے ضائع نہیں کرنا چاہتے ہیں۔

ایشیا کپ میں کس کا پلڑا بھاری؟

روایتی حریف ایشیائی سر زمین پر اس سے قبل کئی بار مدمقابل ہوچکے ہیں،  ایشیا کپ میں دونوں ٹیمیں 12مرتبہ آمنے سامنے ہوئی۔ جس میں بھارت 6 مرتبہ اور شاہین 5 مرتبہ کامیاب رہے۔ ایک میچ کافیصلہ نہ ہو سکا۔دونوں ٹیموں میں بھارتی بلے باز ویرات کوہلی ایشیا کپ میں 459 رنز بنا کر ٹاپ اسکورر ہیں۔پاکستان کی جانب سے محمد حفیظ نے سب سے زیادہ 437 رنز بنائے مگر ایشیا کپ 2018 میں پاکستان اور بھارت کو ان کھلاڑیوں کی خدمات حاصل نہیں ہونگی۔

بھارتی ٹیم 6 بار ایشیا کپ ٹائٹل جیت کر ٹورنامنٹ کی کامیاب ترین ٹیم ہیں،  پاکستان دو بار ایشیائی چیمپئین بنے میں کامیاب رہا ہے۔ قومی شاہین آج  بھارت کو شکست دے کر ایشیا کپ ریکارڈ برابر کرنے کی بھرپور کوشش کرینگے۔ 

سرفراز احمد کی میڈیا سے گفتگو: 

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفرازاحمد کا کہنا ہے کہ بھارت کو ہرانے کی حکمتِ عملی بنالی ہے، چیمپئنز ٹرافی والی کارکردگی دہرائیں گے۔انھوں نے کہا کہ   وزیراعظم عمران خان میچ دیکھنے آئے توکھلاڑیوں کا حوصلہ بڑے گا۔

گوتھم گمبیر کا سوال: 

گوتم گھمبیر نےپاک بھارت سیریزکےحوالےسےدونوں ملکوں کےبڑوں سےبڑاسوال کردیا، انھوں نے کہا کہ پاکستان اوربھارت ایشیا کپ میں کھیل سکتےہیں تودونوں ملک آپس میں سیریزکیوں نہیں کھیل سکتے؟

 

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔