ایف بی آر ملٹی نیشنل کمپنیوں کو ٹیکس ریلیف دینے کیلئے سرگرم ہوگیا


اسلام آباد(24نیوز) ایف بی آر حکام میں تمباکو سیکٹر پر ٹیکسز کے نفاذ میں ردو بدل پر اختلافات پیدا ہوگئے،  ایف بی آر ملٹی نیشنل کمپنیوں کو ٹیکس ریلیف دینے کیلئے سرگرم ہوگیا.تیسرے سلیب کے باوجود ایف بی آر تمباکو سیکٹر سے 120 ارب روپے کا ٹیکس وصول کرنے میں ناکام رہا ۔

ذرائع کے مطابق ایف بی آر  تمباکو سیکٹر سے مقررہ ٹیکس ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہا۔  رواں سال تمباکو سیکٹر سے 90 ارب روپے کی آمدن متوقع ہے۔ تمباکو سیکٹر سے محصولات کیلئے 120 ارب روپے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا، لیکن وصولیوں میں صرف 4.5 فیصد اضافہ ہوا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے سابقہ ریکارڈ ٹوٹ گئے

 ملک بھر میں سگریٹس کی فروخت میں 100 فیصد اضافہ ہوا،  صرف جنوری میں سگریٹس کی پیداوار میں 131 فیصد اضافہ ہوا ، ایف بی آر ذرائع کا کہنا ہے کہ تمباکو سیکٹر سے تیسرے سلیب کے بغیر گزشتہ برس 86 ارب روپے ٹیکس وصول ہوا،  تیسرے سلیب کے نفاذ کے وقت تمباکو سیکٹر سے 150 ارب روپے ٹیکس وصولیوں کا وعدہ کیا گیا تھا لیکن ملٹی نیشنل کمپنیوں نے اپنا وعدہ پورا نہیں کیا۔