انسانیت سوز واقعہ،مسلمان قیدی کےجسم پر ہندو مذہب کا نشانہ داغ دیاگیا

 انسانیت سوز واقعہ،مسلمان قیدی کےجسم پر ہندو مذہب کا نشانہ داغ دیاگیا


نئی دلی( 24نیوز ) بد نام زمانہ تہاڑ جیل میں مسلمان کو زبردستی ہندو بنانے کی کوشش کی گئی ،جیل سپرنٹڈنٹ نے شبیر نامی مسلمان کو نہ صرف تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ اسکے جسم کو داغ کر اس پر لفظ ' اوم ' بھی کندہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر کی تہاڑ جیل میں مسلمان کو زبردستی نہ صرف ہندو بنانے کی کوشش کی گئی بلکہ جیل سپرنٹڈنٹ نے شبیر نامی مسلمان کو نہ صرف تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ اسکے جسم کو داغ کر اس پر لفظ ' اوم ' بھی کندہ کر دیا ، مسلمان قیدی کا قصور یہ تھا کہ اس نے چولہا نہ جلنے کی شکایت کی تھی،آل انڈیا جلس اتحاد المسلمین کے صدر اسد الدین اویسی نے اپنی تازہ ترین ٹویٹ میں ان تصاویر پر شدید تنقید کا اظہار کیا ہے جن میں انتہا پسند ہندوؤں نے جسموں کو جانوروں کی کی طرح جلا کر ایک لفظ کندہ کرایا ہے اور یہ لفظ ہندو ؤں کا مقدس نام اوم ہے۔

اسد الدین اویسی نے اس ظلم اور تشدد پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسلمانوں کی تذلیل کا یہ نیا طریقہ ڈھونڈھا گیا ہے, انہوں نے

  یہ مذہبی برانڈنگ ہے جو جانوروں کے لیے بھی ایک مکروہ عمل ہے مگر ہم تو انسان ہیں۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER