مدت ملازمت میں توسیع پانے والے پاکستان فوج کے سپہ سالار

مدت ملازمت میں توسیع پانے والے پاکستان فوج کے سپہ سالار


اسلام آباد(24نیوز)  آئین کے مطابق صدرپاکستان، وزیر اعظم پاکستان کے مشورہ و تائید سے پاکستان آرمی کے سربراہ کا انتخاب کرتے ہیں۔

پاکستانی فوج کی قیادت اب تک 16 جرنیل کر چکے ہیں۔ موجودہ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ ہیں جو جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت ختم ہونے کے بعد 29 نومبر 2016ء کو پاک فوج   کے سربراہ مقرر ہوئے۔ جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت 29 نومبر کو ختم ہونی تھی لیکن وزیراعظم عمران خان نے ان کے عہدے کی مدت میں مزید تین سال کا اضافہ کردیا ہے۔  جنرل قمر جاوید باجوہ باجوہ  مدت ملازمت میں توسیع پانے والے جنرل (ر) اشفاق پرویز کیانی کے بعد دوسرے فوجی سربراہ ہیں۔ کیانی 29 نومبر 2007 کو مشرف کی ریٹائرمنٹ کے بعد آرمی چیف بنے ، ان کی مدت 2010 میں پوری ہونی تھی لیکن اس وقت کے صدر آصف زردری نے ان کی مدت ملازمت میں توسیع کی اور یوں وہ 2013 تک پاکستان فوج کے سپہ سالار رہے۔ 

جمہوری دور میں صرف یہ ہی دو سپہ سالار ہیں جنھوں نے اپنی ملازمت میں ایکسٹینشن حاصل کی۔  علاوہ ازیں جنرل (ر) ایوب خان ، جنرل (ر) ضیاء الحق اور جنرل (ر) پرویز مشرف نے چیف آف آرمی اسٹاف کی حیثیت سے اپنے عہدوں میں از خودتوسیع کرلی تھی۔جنرل (ر) عبدالوحید کاکڑ اور جنرل (ر) مرزا اسلم بیگ اپنی معینہ مدت کی تکمیل پرریٹائر ہوگئے جب کہ جنرل (ر) جہانگیر کرامت کو قبل از وقت ریٹائر کردیا گیا۔ جنرل (ر) آصف نواز اپنی اچانک وفات کے باعث مدت مکمل نہ کرسکے۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔