چین بلوچ عسکریت پسندوں سے درپردہ مذاکرات کررہا ہے، برطانوی اخبار کا دعویٰ


اسلام آباد(24نیوز) برطانوی اخبار فنانشل ٹائمز نے دعویٰ کیا ہے کہ چین سی پیک پر کی جانے والی 60 ارب ڈالر کی سرمایہ کو محفوظ بنانے کے لئے پانچ سے بلوچ عسکریت پسندوں کے ساتھ درپردہ مذاکرات کررہا ہے۔

  چین سی پیک منصوبوں کو محفوظ بنانے کے لئے درپردہ سرگرم، بلوچ عسکریت پسندوں کو بھی اعتماد میں لینے کی کوششیں جاری ہیں، جس کے بارے میں پاکستانی حکام کو بھی علم نہیں تھا۔

برطانوی اخبار فنانشل ٹائمز کا دعویٰ ہے کہ چین نے پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت منصوبوں بڑی رقم خرچ کی ہے اور 60 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری متوقع ہے، جسے وہ محفوظ بنانا چاہتا ہے۔ اخبار کے مطابق اگرچہ پاکستان کو چین کے بلوچ علیحدگی پسندوں سے مذاکرات کے بارے میں معلومات نہیں لیکن پاکستانی حکام نے ان مذاکرات کا خیرمقدم کیا ہے۔اس بارے میں ایک پاکستانی اہلکار کا کہنا ہے کہ کہ اگر بلوچستان میں امن قائم ہوتا ہے تو آخر میں اس کا فائدہ دونوں کو ہوگا۔

ایک اور اہلکار کا کہنا تھا کہ امریکا کی جانب سے سکیورٹی امداد معطل کرنے کے بعد پاکستان کا امریکا پر سے اعتبار اٹھ گیا ہے اور وہ اب چین کو ہی اپنا اصل دوست سمجھتا ہے، جبکہ چین بھی دوستی کے ساتھ ساتھ اپنے سرمائے کا تحفظ یقینی بنانا چاہتا ہے۔