بلوچستان کے بعد گلگت بلتستان میں بھی تبدیلی کی بازگشت


اسلام آباد (24 نیوز) بلوچستان کے بعد اِن ہاؤس تبدیلی کی ہواؤں نے گلگت بلتستان کا رُخ کر لیا، حکومت اور اپوزیشن کے بیس ارکان اسمبلی نے وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمان کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے پر اتفاق کرلیا، تحریک عدم اعتماد سے بچنے کے لیے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے ن لیگی قیادت سے رابطہ کرلیا۔

بلوچستان کے بعد گلگت بلتستان میں بھی تبدیلی کی بازگشت۔ ثنا اللہ زہری کی طرح وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمان کے سر پر بھی عدم اعتماد کی تلوار لٹکنے لگی۔ ذرائع کے مطابق حکومتی اتحاد اور اپوزیشن کے 20 ارکان نے تحریک عدم اعتماد لانے پر اتفاق کر لیا۔

پیپلز پارٹی کے ایم ایل اے جاوید حسین کا دعوٰی ہے کہ اپوزیشن کے گیارہ اور 9 حکومتی ارکان اُن کے ساتھ ہیں۔ تبدیلی کے خواہشمندوں میں نون لیگ، پیپلز پارٹی، ایم ڈبلیو ایم، جے یو آئی اور تحریک اسلامی کے ارکان شامل ہیں، تبدیلی کی صورت میں نیا وزیراعلیٰ نون لیگ سے ہی لایا جائے گا۔