سانحہ ساہیوال:پولیس بے بس،مظاہر ین نے اہلکاروں کی دوڑیں لگوادیں



لاہور( 24نیوز ) سی ٹی ڈی کے مبینہ مقابلے میں مارے گئے افراد کی میتیں ورثاکے حوالے کردی گئیں ہیں جس پر لواحقین غم و غصے سے نڈھال ہیں،ورثا سمیت دیگر افراد سی ٹی ڈی اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں اور جی ٹی روڑ پر لاشیں رکھ کر سراپا احتجاج ہیں۔

ورثا ءنے لاشیں رکھ کر اور ٹائرز جلا کر سڑک بلاک کر دی ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ جب تک واقعے میں ملوث افراد کےخلاف مقامی تھانے میں مقدمہ درج نہیں کیاجائے گا اس وقت تک دھرنا ختم نہیں کریں گے،جب کہ پولیس کا کہنا ہے کہ سی ٹی ڈی ٹیم لاہور کی تھی جس کے تھانے مخصوص ہیں جو کہ لاہور میں ہیں یا ملتان میں ہیں تاہم اس کا مقدمہ لاہور میں درج کیا جائے گا۔

چونگی امر سدھو میں سانحہ ساہیوال کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین کا صبر جواب دے گیا، مذاکرات کیلئے آنے والی ٹیم کو گھیرے میں لے لیا اور پولیس کیخلاف نعرے لگانے شروع کردیئے، اسی دوران پولیس اور مظاہرین کے درمیان تلخ کلامی اور ہاتھا پائی ہوئی،  پولیس اہلکاروں نے بھاگ کر اپنی جان بچائی۔ ڈی ایس پی کاہنہ رضا شاہ، انسپکٹر رضوان مظاہرین سے مذاکرات کیلئے گئے تھے۔

لاہور کے فیروز پور روڈ پر احتجاج کیا جارہا ہے، لاہور میٹرو بس کو بھی بند کردیا گیا ہے،اسی طرح ساہیوال میں بھی لواحقین کی طرف سے احتجاج کیا جارہا ہے،احتجاج میں مظاہرین انصاف کا مطالبہ کررہے ہیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer