خوشحال پاکستان سکیم، ثبوت نہ ملنے پر نواز شریف کیخلاف انکوائری بند

خوشحال پاکستان سکیم، ثبوت نہ ملنے پر نواز شریف کیخلاف انکوائری بند


اسلام آباد ( 24نیوز ) نیب نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف خو شحال پاکستان سکیم اور شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الٰہی، چوہدری منظور الٰہی کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انکوائری بند کرنے کی منظوری دے دی۔

سابق وزیر اعظم کے مشیر امیر مقام، کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر، کے خلاف تحقیقات شروع کرنے کی منظوری دے دی۔ چیرمین جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور دیگر کے خلاف خو شحال پاکستان سکیم میں عدم ثبوت کی بنیاد پر انکوائری بند کرنے کی منظوری دے دی۔ ایگزیکٹیو بورڈ نے کہا کہ ریفرنس بند کرنا اس بات کا ثبوت ہے کہ نیب صرف اور صرف قانون اورٹھوس شواہد کی بنیاد پر کاروائی کرتا ہے۔

 یہ بھی پڑھیں:مریم نواز کے اثاثے سامنے آگئے 

نیب نے شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الٰہی، چوہدری منظور الٰہی اور دیگر کے خلاف عدم ثبوت کی بنیاد پر انوسٹی گیشن بند کرنے کی بھی منظوری دی۔ نیب نے سابق چیف فنانشل آفیسر پنجاب پاور ڈویلیپمنٹ کمپنی اکرام نوید اور کیپٹن صفدر اور سابق وزیر اعظم کے مشیر امیر مقام کے خلاف انکوائری کی منظوری دے دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر آمدن سے زائد آثاثے بنانے کا الزام ہے۔ سابق رکن اسمبلی خیبر پختون خواہ ملک قاسم کے خلاف انکوائری کی منظوری دے دی گئی۔

یہ خبر ضرور پڑھیں:الیکشن کمیشن کا امیدواروں کی تفصیلات عام کرنیکا فیصلہ 

نیب نے پاکستان ٹیلی ویژن میں مبینہ غیر قانونی بھرتیوں اور بدعنوانی کا کیس ایف آئی اے کو بجھوانے کی منظوری دی۔ افتخار رحیم خان، سابق سیکرٹری ورکرز ویلفئیرفنڈ اسلام آباد کے افسران کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری بھی دے دی ہے۔ ملزمان مبینہ طور پر غیر قانونی طور پر تقرریوں اور میڈیکل کالج روات کے لیے 300 کنال زمین مہنگے داموں خریدنے کا الزام ہے۔

پڑھنا نہ بھولیں:نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث ناں ناں کرتے آخر کار مان گئے 

نیب نے ڈی ایچ اے اسلام آباد کی انتظامیہ، بحریہ ٹاون، چئیرمین سی ڈی اے اور دیگر کے خلاف انوسٹی گیشن کی منظوری دی۔ ملزمان پر مبینہ طور پر غیر قانونی طور پر زمین الاٹ کرنے اور ڈی ایچ اے ویلی اور ڈی ایچ اے فیزٹو ایکسٹینشن کوڈویلیپ نہ کرنے کاالزام ہے غیرقانونی طور پر زمین الاٹ کرنے سے ہزاروں متاثرین کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔ نیب نے وائس چانسلر سندھ ایگریکلچر یونیورسٹی ٹنڈو جام ڈاکٹر مجیب الدین میمن اور دیگر کے خلا ف انکوائری کی منظوری دی۔