صحافی جمال خاشوگی کہاں ہیں؟ سعودی عرب نے بتادیا



ریاض( 24نیوز )سعودی نڑاد امریکی صحافی جمال خاشوگی قونصل خانے میں جھگڑے کے دوران مارے گئے، سعودی عرب نے قتل کی تصدیق کردی۔

سعودی حکام کاکہنا ہے کہ 18 سعودی شہریوں کو قتل کے الزام میں گرفتار اور پانچ اعلیٰ اہلکاروں کو برطرف کر دیا گیا،امریکا نے شفاف تحقیقات کی حمایت کردی۔

ترکی میں سعودی عرب کے قونصل خانے سے لاپتہ سعودی صحافی کی موت کی تصدیق ہوگئی، سعودی عرب کا کہنا ہے کہ استنبول کے قونصل خانے میں جمال خاشوگی اور وہاں موجود افراد میں جھگڑا ہوا جس کے باعث ان کی موت واقع ہوئی،سعودی سرکاری ٹی وی کا کہنا ہے کہ قونصل خانے میں جھگڑے کے دوران موت واقع ہوئی۔

صحافی کے قتل کے الزام میں 18 افراد گرفتارکرکے تحقیقات کی جارہی ہیں،دو سعودی مشیروں سمیت پانچ اعلیٰ عہدیدار برطرف کردیئے گئے ہیں، برطرف ہونے والوں میں سعودی انٹیلی جنس ایجنسی کے نائب صدر احمدالعسیری بھی شامل ہیں ۔

سعودی فرمانروا شاہ سلمان اورترک صدرطیب اردوان کےدرمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے جس میں دونوں رہنماوں کاصحافی کے قتل کی تحقیقات میں تعاون جاری رکھنے پراتفاق کیا، سعودی عرب کے اعتراف پروائٹ ہاوس کا کہنا ہے کہ صحافی کے قتل پرافسوس ہوا۔امریکا بروقت،شفاف اور قانون کے مطابق تحقیقات کی حمایت کرتا ہے۔ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کا کہنا ہے کہ صحافی کے قتل کی تصدیق پریشان کن ہے۔

واضح رہے اس سے قبل ترکی میں روسی سفیر کو تقریب کے دوران سٹیج پر گولی مار کر قتل کردیا گیا تھا،قاتل کو فوری گرفتار کرلیا گیا تھا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer