سائنس پالیسی کانفرنس: وفاقی وزیرخطاب کے دوران شاعری سنانے لگے


اسلام آباد (24 نیوز) مخالفین پر تابڑ توڑ حملے کرنے کیلئےشہرت رکھنے والے سینیٹر مشاہد اللہ نے موسمیاتی کانفرنس میں اپنی زندگی کی دستانیں سنا ڈالیں اور ایک طویل نظم پڑھ کر شرکاء کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا۔

تفصیلات کے مطابق موسمیاتی تبدیلی کے وفاقی وزیر مشاہد اللہ تُلی ہوئی گفتگو اور تلی ہوئی بول چال کیلئے شہرت رکھتے ہیں۔ موسمیاتی تبدیلی پر مبنی سائنس پالیسی کانفرنس میں جب وہ خطاب کیلئے آئے تو ان کے چٹکلوں سے محظوظ ہوئے بغیر کوئی نہ رہ سکا۔

وفاقی وزیر نے دوران خطاب سائنس سے اپنی لاتعلقی کا اعتراف بھی کیا۔

 تاہم انھوں نے اپنے خطاب کے دوران سب کوخوب محفوظ کیا۔ علاوہ ازیں ایک طویل نظم بھی شرکاء کے کوش گزار کی۔

ذرائع کے مطابق چٹکلوں کے بعد دلچسپ اور دراز نظم سن کر شرکاء نے جہاں سینٹر کو خوب داد سے نوازا وہیں ان کی یاداشت بھی موضوع گفتگو بنی۔