فلسطینی حمایت کیلئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ووٹنگ جاری

فلسطینی حمایت کیلئے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ووٹنگ جاری


نیویارک (24 نیوز) امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیے جانے کے فیصلے کے خلاف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں آج ووٹنگ ہورہی ہے۔ اقوام متحدہ کے 193 ممبران ممالک امریکی متنازع فیصلہ پر ووٹ دے رہے ہیں۔

جنرل اسمبلی ذرائع کے مطابق امریکی اعلان کے خلاف مذمتی قرارداد آسانی سے منظور کرلی جائے گی۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا اجلاس پاکستانی وقت کے مطابق رات 8 بجے شروع ہوگا۔ امریکی متنازع فیصلہ کے خلاف قرار داد پیش کرنے والوں میں پاکستان، ترکی اور یمن بھی شامل ہیں۔

اقوام متحدہ میں پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی نے امید ظاہر کی ہے کہ قرار داد بھاری اکثریت سے منظور کرلی جائے گی اور اس سے امریکہ کو پیغام جائے گا کہ دنیا فلسطین کے ساتھ کھڑی ہے۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دھمکی دی ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے امریکی فیصلہ کے خلاف پیش کی جانے والی قرارداد کی حمایت کرنے والے ممالک کی مالی امداد روک لی جائے گی۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ امریکی فیصلہ کی مخالفت کرنے والے ہم سے لاکھوں ڈالر اور یہاں تک کہ اربوں ڈالر لیتے ہیں اور اس کے بعد بھی ہمارے خلاف ووٹ دیتے ہیں، انہیں ایسا کرنے دیں، ہم اس ووٹنگ کو دیکھ رہے ہیں۔ اگر ہمارے خلاف ووٹ دیا گیا تو اس کی کوئی پروا نہیں ہم بہت سے پیسے بچا لیں گے۔

واضح رہے کہ 18 دسمبر کو سلامتی کونسل میں مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق متنازع امریکی فیصلہ مسترد کرنے کی درخواست امریکہ نے ویٹو کردی تھی۔ اقوام متحدہ میں امریکی نمائندہ خصوصی نکی ہیلے نے سلامتی کونسل میں درخواست ویٹو کرنے کے بعد مختلف سفیروں کو دھمکی آمیز خطوط بھی لکھے۔