قومی ترانے کے خالق عبدالحفیظ جالندھری کا یوم وفات خاموشی سے گزر گیا

قومی ترانے کے خالق عبدالحفیظ جالندھری کا یوم وفات خاموشی سے گزر گیا


لاہور (24 نیوز) قومی ترانے کے خالق عبدالحفیظ جالندھری کا 36 واں یوم وفات خاموشی سے گزر گیا، گریٹراقبال پارک میں مدفن تحریک پاکستان کے عظیم سپوت کی وفات پر کوئی تقریب ہوئی اور نہ ہی خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

حفیظ جالندھری چودہ جنوری انیس سو میں جالندھر کے ایک مذہبی گھرانے میں پیدا ہوئے، قلمی نام جالندھر پڑا اور استاد نے انہیں ابوالاثر کا نام دیا۔ انہوں نے پاکستان حاصل کرنے کیلئے جدو جہد اور قومی ترانہ بھی لکھا۔ وہ 21 دسمبر 1982 کو اپنے خالق حقیقی سے جا ملے۔

قوم کے عظیم سپوت کی یوم وفات کو سرکاری اور نیم سرکاری اداروں کی جانب سے مکمل طور پر فراموش کر دیا گیا، مزار پر تقریب ہوئی اور نہ ہی کوئی سیمینار۔ شہریوں کا کہنا تھا کہ حکومتی سطح پر حفیظ جالندھری کی خدمات کو اجاگر کرنے کے لیے اقدامات کئے جائیں۔