آئی ایم ایف سے حتمی مذاکرات، حکومت کی اسٹیٹ بینک کو قرض واپسی شروع

آئی ایم ایف سے حتمی مذاکرات، حکومت کی اسٹیٹ بینک کو قرض واپسی شروع


( 24 نیوز ) آئی ایم ایف سے حتمی مذاکرات کے پیش نظر حکومت نے مرکزی بینک کا قرض واپس کرنا شروع کر دیا،  ایک ہفتے میں 19 کھرب روپے واپس کیے گئےتاہم اس کے لیے کمرشل بینکوں سے نیا قرض لیا جارہا ہے۔

حکومت نے آئی ایم ایف سےقرض لینے کے سلسلے میں اقتصادی پالیسیز اور معاشی اہداف کا میمورنڈم جمع کرایا ہے، ذرائع کے مطابق اس میں وفاقی حکومت کی طرف سے مرکزی بینک سے قرض نہ لینے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے جبکہ 30 نومبرتک حکومت اخراجات کیلئے مرکزی بینک سے 30 کھرب روپے قرض لے چکی تھی جس کے باعث حکومت نے میمورنڈم جمع کرانے کے ساتھ مرکزی بینک کے قرض کی واپسی بھی شروع کردی۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق ہفتےکےدوران حکومت نے 19 کھرب 50 ارب روپے کا قرض لیا، جس میں سے18 کھرب 98 ارب روپےمرکزی بینک کو واپس کیےجبکہ 52 ارب روپے سے دوسرے اخراجات پورے کیے گئے۔ یاد رہے آئی ایم ایف کی طرف سے2013 میں قرض دیتےوقت مرکزی بینک کاقرض واپس کرنےاورنیا قرض نہ لینے کی شرط رکھی گئی تھی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer