سپیکر سندھ اسمبلی 14روزہ جسمانی ریمانڈپر نیب کے حوالے،سندھ بھر میں مظاہرے



کراچی( 24نیوز )سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کواحتساب عدالت نے یکم مارچ تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا۔ آغا سراج درانی کا کہنا ہے کہ وہ اپنے خلاف لگائے گئے الزامات کا عدالت میں سامنا کرنے کے لئےتیار ہیں۔

نیب حکام نے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کوآمدن سے زائداثاثے بنانے کے الزام میں عدالت میں پیش کیا۔ سپیکر کو بکتر بند گاڑی میں رینجرز کی سیکورٹی میں سخت حفاظتی انتطامات میں عدالت پہنچایا گیا۔اس موقع پر صحافیوں نسے بات کرتے ہوئے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے کہا کہ وہ اپنے خلاف الزامات کا سامنا کرنے کوتیار ہیں۔ نیب نے انہیں طلب ہی نہیں کیا تو وہ کیسے اپنا موقف پیش کرتے، ان کا کہنا تھا کہ وہ بے نظیر بھٹو کے سپاہی ہیں۔ 

تفتیشی افسر نے تحقیقت مکمل کرنے کے لئے عدالت سے آغا سراج درانی کے14روزہ ریمانڈ کی استدعا کی۔ تاہم عدالت نے آغا سراج درانی کو یکم مارچ تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرنے کا حکم دیا،آغا سراج درانی کی پیشی کے موقع پر پیپلز پارٹی کے کارکنوں اور رہنماوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔

ادھر سندھ بھر میں سپیکر سندھ اسمبلی آغاسراج درانی کی گرفتاری کے خلاف سندھ کے مختلف علاقوں میں احتجاج کیا گیا۔پیپلزپارٹی کے کارکنوں نے آغا سراج درانی کی گرفتاری کے خلاف جامعہ سندھ جامشورو میں احتجاج کیا،مظاہرین کا کہنا تھا کہ سپیکر سندھ اسمبلی اغا سراج درانی کی گرفتار سندھ اسمبلی اور آئین پر حملہ ہے ،  پی ٹی آئی حکومت سندھ سے دشمنی کا ثبوت دے رہی ہے،آغا سراج درانی کو فوری رہا کیا جائے۔

گرفتاری پر ناراض جیالے سڑکوں پر  نکل آئے

کندھ کوٹ ،نواب شاہ،کشمور میں بھی مظاہرے ، پیپلز پارٹی کے جیالے سڑکوں پر نکل آئے، گڈو میں بھی گیٹ نمبر 2 سے لیکر پریس کلب تک سٹی صدر امیر حسین دشتی ،سلیم خان پٹھان کی سربراہی میں احتجاجی ریلی نکالی۔مظاہرین نے کہا کہ آغا سراج درانی کی نیب کے ہاتھوں گرفتاری کی مذمت کرتے ہیں،پیپلز پارٹی کے لئے گرفتاری کوئی نئی بات نہیں ہے.پپلز پارٹی قیادت من گھڑت الزامات کا سامنا کر رہی ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer