سی ٹی ڈی کا ایک اور دعویٰ جھوٹا ثابت،راز سے پردہ اٹھ گیا



لاہور( 24نیوز )سی ٹی ڈی کا ایک اور دعویٰ جھوٹا ثابت،راز سے پردہ اٹھ گیا،ترجمان سی ٹی ڈی کی طرف سے پیش کی گئیں وضاحتیں دم توڑنے لگیں۔

عینی شاہد فہد کی ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں اس کا کہنا ہے کہ ایلیٹ پولیس کے اہلکاروں نے آتے ہی گاڑی پر فائرنگ شروع کردی،ایک منٹ بھی فائرنگ نہیں روکی گئی،ہم دیکھ رہے تھے کہ کیا ہورہا ہے،پتا نہیں بچے کس طرح بچ گئے،ملک میں ظلم کی اخیر ہوگئی ،یہ سچ کے بدمعاش ہیں،ہمارے محافظ ہی بڑے بدمعاش ہیں،پتہ نہیں بچوں کا کیا بنے گا۔

دوسری طرف 24نیوز نے سی ٹی ڈی کے ایک اور دعوے کو جھوٹا ثابت کردیا،سی ٹی ڈی کا کہنا تھا کہ گاڑی کے شیشے کالے تھے اس لئے خواتین اور بچوں کی موجودگی کا پتہ نہیں چل سکا،لیکن اب معلوم ہوا ہے کہ گاڑی کا صرف ایک شیشہ کالا تھا کوئی بھی گاڑی کے باہر سے اندر موجود افراد کو آسانی سے دیکھ سکتا تھا،ویڈیو میں صرف اندر موجود افراد کو ہی نہیں دیکھا جاسکتا بلکہ اس کے پیچھے آنیوالے ٹرک کی ہیڈ لائٹس بھی نظر آرہی تھیں۔

یاد رہے کہ سا ھیوال میں کاﺅنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ ( سی ٹی ڈی) اہلکاروں کی فائرنگ سے کار میں سوار خاتون، بچی اور دو افراد جاں بحق ہوگئے تھے اور واقعے میں تین بچے زخمی بھی ہوئے جن میں سے دو بچے لاہور کے جنرل ہسپتال میں زیر علاج ہے جبکہ ایک بچی کو طبی امداد کے بعد گھر بھیج دیا گیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer