کرتار پور راہداری معاملہ میں اہم پیش رفت

کرتار پور راہداری معاملہ میں اہم پیش رفت


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان نے کرتارپور راہداری کھولنے کے حوالے سے بھارت کو معاہدے کا مسودہ بھجوا دیا، حکومت نے ڈائریکٹر جنرل جنوبی ایشیا ڈاکٹر فیصل کو کرتار پور پر فوکل پرسن تعینات کر دیا۔ 

کرتار پور راہداری معاملہ میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے بھارتی سرکار کو اسلام آباد دورے کی دعوت دے دی ہے۔ دعوت میں کہا گیا ہے کہ بھارت کرتار پور معاہدے پر مذاکرات کے لیے جلد اپنا وفد اسلام آباد بھیجے۔ بھارتی وفد کے ساتھ مذاکرات سے معاہدے کو جلد حتمی شکل دینے کی تجویز دی ہےجبکہ حکومت نے ڈائریکٹر جنرل جنوبی ایشیا ڈاکٹر فیصل کو کرتار پور پر فوکل پرسن تعینات کر دیا ہے۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان نے کرتار پور معاہدے کا ڈرافٹ بھارتی ہائی کمیشن کے حوالے کر دیا ہے۔

واضح رہے پاکستان بابا گرونانک کے 550 ویں جنم دن پر کرتار پور راہداری کھولنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق یہ فیصلہ اسلامی اصولوں کے مطابق کیا گیا ہے۔ اسلامی اصولوں کے مطابق تمام مذاہب کا احترام کرتے ہیں۔ قائد کے وژن کے مطابق پر امن ہمسائیگی پر یقین رکھتے ہیں اور پاکستان علاقائی امن و ترقی کے لئے کام کرتا رہے گا۔