نیکٹا نے عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کو الرٹ کردیا

نیکٹا نے عام انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کو الرٹ کردیا


اسلام آباد(24نیوز) عام انتخابات میں امیدواروں کےلئے سکیورٹی خدشات بڑھ گئے، وفاقی حکومت نے نیکٹا کے ذریعے ملک بھر کا سیکیورٹی سروے کروا لیا۔ انتخابی مہم کے دوران وفاقی اور چاروں صوبائی کابینہ کے ارکان ،متحرک پارلیمنٹیرینز کو بھی خدشات لاحق ہو سکتے ہیں۔

2018 کے عام انتخابات میں امیدواروں کے سکیورٹی خدشات بڑھ گئے، وفاقی حکومت نے نیکٹا کے ذریعے ملک بھر کا سیکیورٹی سروے کروا لیا۔سروے کا فیصلہ نواز شریف پر جوتا اور خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے کے بعد کیا گیا تھا ، جبکہ  احسن اقبال پر حملے کے بعد سروے کو ہنگامی بنیادوں پر مکمل کیا گیا۔ 

یہ بھی پڑھیں: عام انتخابات ،الیکشن کمیشن نے لنگوٹ کس لیا

ذرائع  کے مطابق انتخابی مہم میں موجود وفاقی کابینہ کے ارکان کو سیکیورٹی خدشات ہو سکتے ہیں۔ چاروں صوبائی کابینہ کے ارکان کو بھی سیکیورٹی خدشات ہیں، نیکٹا رپورٹ کے مطابق اہم پارلیمانی لیڈرز بھی سیکیورٹی خدشات کی زد میں ہیں.

اہم خبر: عام انتخابات 2018 کب ہوں گے؟ الیکشن کمیشن پاکستان نے بتادیا

ذرائع کے مطابق وزارت داخلہ کا سروے الیکشن کمیشن اور صوبائی حکومتوں کو بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے، جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن صوبائی حکومتوں کو متعلقہ امیدواروں کو سیکیورٹی فراہمی کے احکامات دے۔

پڑھنا مت بھولیں: مسلم لیگ ن نے اپنے دور اقتدار میں ملکی معیشت کی دھجیاں اڑادیں 

جبکہ نیکٹا کی جانب سے بھی سیکیورٹی اقدامات  تجویز کیے گئے ہیں، جن میں بتایا گیا ہے کہ مقامی انتظامیہ تمام جلسوں کیلیے واک تھرو گیٹس کا انتظام کرے، جلسے کی سیکیورٹی پر معمور افراد کے پاس میٹل ڈیٹیکٹر آلات بھی ہوں،  امیدوار اپنی ذاتی سیکیورٹی کا بھی انتظام کریں، امیدوار اپنی نقل و حرکت سے متعلقہ اداروں کو آگاہ رکھیں۔