سنگ مرمر سے بنی سوات کی تاریخی مسجد


سوات ( 24نیوز ) سوات ریاستی دور کے سنگ مر مر سے تعمیر ہونیوالی تاریخی مسجد میں ماہ صیام کے آغاز سے ہزاروں کے تعداد میں لوگ عبادت کیلئے پہنچتے ہیں۔
ریاستی دور کے سنگ مرمر اور دیار کی لکڑی سے تعمیر ہونے والی یہ وسیع و عریض خوبصورت مسجد سیدو شریف میں واقع ہے۔ اس مسجد کو ریاستی دور 1943 میں ولی عہد میاں عبدالودود نے تعمیر کیا تھا۔ ریاستی دور کے کاریگروں نے مسجد میں منفرد نقش ونگار کی ہے۔ اور مسجد کے فرش اور دیواروں میں وہی سنگ مر مر کا استعمال کیا گیا ہے جو تاج محل میں استمال ہوا ہے۔
جس کی وجہ سے مسجد میں ٹھنڈک کی وجہ سے روزانہ ہزاروں لوگ عبادت اور نماز کیلئے پہنچتے ہیں۔ مسجد میں وضو کیلئے ریاستی دور کے چشمے کا پانی استعمال کیا جاتا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: رمضان بازاروں میں بھی اشیاو خورونوش کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگیں
مسجد کے صحن میں سوات کے سابق ولی عہد میاں گل عبدالودود کے دادا میاں گل عبدالغفور المعروف سیدوبابا کا مزار بھی ہے، اس لئے یہ مسجد سیدوبابا کہلاتی ہے۔مسجد میں زائرین کی بھی بڑی تعداد آتی ہے اور نماز پڑھنے کے بعد مزار کے احاطے میں ذکر و عبادت کرتے ہیں۔
رمضان کے با برکت مہینے میں بزرگ یہاں نماز پڑھنے کے بعد ٹھنڈے فرش پر آرام کرنے اور شام تک قیام کرنے کو ترجیح دیتے ہیں،سنگ مرمر سے تعمیر ہونے والے اس مسجد میں ماہ سیام کے اغاز کے بعد عبادت گزاروں کا رش کئی گنا بڑھ جاتا ہے۔

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں