کراچی: عباسی شہید ہسپتال کے وارڈ بوائے کا انوکھا احتجاج

کراچی: عباسی شہید ہسپتال کے وارڈ بوائے کا انوکھا احتجاج


  کراچی (24نیوز) عباسی شہید ہسپتال کراچی کے وارڈ بوائے نے کیا ایک انوکھا احتجاج تنخواہ نہ ملنے کے خلاف وارڈبوائے نے احتجاجاً ایم ایس آفس کے سامنے رکھا  ہوا فرنیچر جلادیا ملازم کوپولیس کے حوالے کردیا گیا۔

 تفصیلات کے مطابق عباسی شہید اسپتال کراچی میں وارڈ بوائے کا تنخواہ نہ ملنے پر انوکھا احتجاج کرتے ہوئے ایم ایس آفس کے سامنے رکھےہوئے فرنیچر کو جلا دیا۔

 یہ بھی پڑھیں:وزیر اعلیٰ پنجاب نے میو ہسپتال میں 100 بستروں پر مشتمل سرجیکل ٹاور کا افتتاح کردیا

 سرکاری املاک کونقصان پہنچانے کے الزام میں شاہد نامی وارڈ بوائے کو پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے، سینئر ڈائیکٹر ہیلتھ کے ایم سی کا کہنا ہے کہ شاہد نامی وارڈ بوائے دو سال پہلے بھی ایسی حرکت کرچکا ہے۔ ڈاکٹربیربل نے کہا کہ سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے کی کسی کو اجازت نہیں دینگے۔

پڑھنا نہ بھولیں:کراچی میں ہیٹ ویو کا خطرہ، سندھ حکومت اورانتظامیہ ان ایکشن

 دوسری جانب  وزیراعلی سندھ مرادعلی شاہ نے گذشتہ روز پریس کلب کے سامنے خواتین پرپولیس اورینجرزکے تشدد کانوٹس لےلیا۔

وزیراعلی کی جانب سے تشکیل دی گئی دورکنی تحقیقاتی کمیٹی کے ارکان وزیرداخلہ سہیل انورسیال اورناصرحسین شاہ نے پریس کلب کے سامنے پہنچ کرخواتین کو انصاف فراہی کی یقین دہانی کرائی۔

یہ خبر ضرور پڑھیں:سحر و افطارمیں کیا کھائیں، کیا نہیں؟ غذائی ماہرین نے بتا دیا

 وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے گذشتہ روز پریس کلب کے سامنے خواتین پر پولیس اور رینجرز تشدد کا نوٹس لے لیا وزیراعلی سندھ نے سندھ کابینہ کے اجلاس میں خواتین پر ہونے والے تشدد پر سخت تشویش کا  اظہارکرتے  ہوئے دو رکنی  وزارتی کمیٹی بھی تشکیل  دے  دی۔

کمیٹی  میں  وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال اور ناصر شاہ شامل ہیں کمیٹی کےارکان نے پریس کلب پہنچ کر تشدد کرنے والوں کے خلاف کاروائی اورلاپتہ افرادکوبازیاب کرانے کی بھی یقین دہانی کرائی۔