ایران کے بعد چین نے بھی امریکا کو خبردار کردیا

ایران کے بعد چین نے بھی امریکا کو خبردار کردیا


بیجنگ( 24نیوز ) چین نے امریکہ پر زوز دیا کہ وہ اشتعال انگیزی سے باز آجائے، امریکابحیرہ جنوبی چین میں سکاروبورو شول کے متنازعہ علاقے میںجنگی بحری جہازوں کی نقل وحرکت بند کرے۔

تفصیلات کے مطابق چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بیجنگ میں ایک بریفنگ میں کہاکہ امریکہ پر زور دیا ہے کہ وہ بحیرہ جنوبی چین میں سکاروبورو شول کے متنازعہ علاقے کے قریب جس پر چین کا ملکیت کا دعویٰ ہے ،اپنے جنگی بحری جہازوں کی نقل وحرکت جیسی اشتعال انگیز کارروائیاں بند کرے،اس سے پہلے امریکی فوج کے ترجمان کمانڈر کلے ڈؤس کاکہناتھاکہ امریکی لڑاکا بحری جہازوں نے سکاربورو کی حدود میں نقل و حرکت کی جس کا مقصد چین کے غیر ضروری بحری دعوؤں کو چیلنج کرنا اور بین الاقوامی قانون کے تحت سمندری گزرگاہوں تک رسائی یقینی بنانا ہے۔

ایک کاروباری سروے کے مطابق چینی امریکی تجارتی جنگ سے ایک تہائی یورپی کمپنیوں کو خسارے کا سامنا ہے، تنازعہ حل نہ ہوا تو مزید مسائل کھڑیں ہوں گے،رواں برس جنوری اور فروری میں کرائے جانے والے اس سروے میں کہا گیا ہے کہ یورپی کمپنیوں کو امریکی اور چینی محصولات میں اضافے کے منفی اثرات برداشت کرنا پڑ رہے ہیں،بیشتر یورپی کمپنیوں کا کہنا ہے کہ 2018 میں چین اور امریکا کے محصولات میں اضافے کے دوطرفہ اقدامات سے اُن کے کاروبار پر کوئی بوجھ نہیں پڑا۔

قبل ازیں چین اور امریکا کے درمیان جاری تجارتی جنگ بھی جاری ہے جس کی وجہ سےیورپی کمپنیاں بھی خسارے کا شکار ہوگئیں،امریکا اور چین کے درمیان جاری کشیدگی میں شدت آچکی ہے،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چینی منصوعات پر اضافی ٹیکس بھی عائد کردیے ہیں،البتہ دوطرفہ تنازعے حل نہ ہوا تو خسارہ ہوسکتا ہے۔

دوسری جانب چینی کمپنی ہواوے ٹیکنالوجیز پر گوگل کی سروسز معطل کردی، گوگل نے یہ قدم اس وقت اٹھایا ہے جب چند روز قبل ہی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہواوے کو بلیک لسٹ کردیا تھا۔