داتا دربار دھماکہ: دہشتگرد کی شناخت ہوگئی، سہولت کار گرفتار



لاہور(24نیوز) لاہور میں داتا دربار خود کش حملے کی تحقیقات میں اہم پیشرفت ہوئی ہے۔

ذرائع سی ٹی ڈی کے مطابق بھاٹی گیٹ کے علاقے سے ایک سہولت کارکو گرفتار کرلیا گیا۔ سہولت کار کا نام محسن خان جوشبقدر چارسدہ کا رہائشی ہے۔  خودکش حملہ آور کی شناخت بھی ہوگئی۔ خود کش حملہ آور کی شناخت صادق اللہ مہمند کے نام سے ہوئی ۔

ذرائع کے مطابق صادق اللہ افغانی پاسپورٹ پر پاکستان میں داخل ہوا۔ خود کش حملہ آور صادق اللہ 6 مئی کو طورخم بارڈر سے پاکستان میں داخل ہوا ، خود کش حملہ آور کو طیب اللہ نامی شخص نے طورخم بارڈر سے لیا ، طیب اللہ خود کش حملہ آور صادق اللہ کو لے کر لاہور پہنچا ، دونوں نے 7 مئی کو سہولت کار محسن اور نور زیب کے گھر قیام کیا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ 8 مئی کو داتا دربار کے باہر خودکش حملے میں میں 5 پولیس اہلکاروں سمیت 12 افراد شہید اور 25 زخمی ہوئے تھے۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔