سابق وزیراعظم نواز شریف کے کیخلاف نیا پنڈورا باکس کھل گیا

سابق وزیراعظم نواز شریف کے کیخلاف نیا پنڈورا باکس کھل گیا


اسلام آباد( 24نیوز )  سارک کانفرنس کی بلٹ پروف گاڑیاں ذاتی استعمال پر نواز شریف سے تفتیش کا فیصلہ سنا دیا گیا، احتساب عدالت نے نیب کو نواز شریف سے جیل میں تفتیش کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے سابق وزیراعظم سےسارک کانفرنس کی بلٹ پروف گاڑیاں ذاتی استعمال کرنے پرتفتیش کی اجازت دی، نیب ٹیم کوٹ لکھپت جیل میں نواز شریف سے تفتیش کرے گی، بلٹ پروف گاڑیوں کےغیرقانونی استعمال پر نواز شریف کے خلاف نیب انکوائری جاری ہے۔

نیب کاکہناتھاکہ بلٹ پروف گاڑیاں نواز شریف اور مریم نواز نے بھی استعمال کیں،جرمنی سے 34 بلٹ پروف گاڑیاں ڈیوٹی ادائیگی کے بغیر خریدی گئی، بلٹ پروف گاڑیاں سارک کانفرنس 2016 کے مہمانوں کے لیے تھی، 34 بلٹ پروف گاڑیوں میں سے 20 گاڑیاں نواز شریف نے اپنے قافلے میں شامل کرلیں۔

نیب بلٹ پروف گاڑیوں کی انکوائری میں شاہد خاقان عباسی کا بیان قلمبند  کیا جبکہ اس کیس میں فواد حسن فواد اور سابق سیکرٹری خارجہ سے بھی پوچھ گچھ ہوگی،وزارت خارجہ کے افسران نے بلٹ پروف گاڑیوں کے معاملے میں اختیارات سے تجاوز کیا، بلٹ پروف گاڑیاں نواز شریف کے اہلخانہ نے استعمال کیں۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER