سردیوں کی آمد ، گیس بحران سے نمٹنے کیلئے نئی حکمت عملی تیار

سردیوں کی آمد ، گیس بحران سے نمٹنے کیلئے نئی حکمت عملی تیار


اسلام آباد(اویس کیانی) سردیاں آرہی ہیں, عوام بھی ہو جائیں تیار کیونکہ رواں سال یومیہ 2ارب کیوبک فٹ گیس کے شارٹ فال کا سامنا ہوگا، گیس بحران سے نمٹنے کے لیے 5 ترجیحات طے کر لی گیئں، اضافی ہوئی تو کھاد، سیمنٹ فیکٹریوں اور سی این جی سیکٹر کو ملے گی۔

تفصیلات کے مطابق موسم سرما کے لئے گیس شارٹ فال سے نمٹنے کے لئے پلان تیار کرلیا گیا،موسم سرما میں صارفین کو گیس کی لوڈشیڈنگ کا سامنا کرنا پڑے گا، موسم سرما میں گیس کی طلب 6 ارب 50 کروڑ کیوبک فٹ تک یومیہ ہونے سے زائد رہنے کا امکان ہے،یومیہ 2 ارب کیوبک فٹ تک گیس کے شارٹ فال کا سامنا رہے گا۔

ذرائع پیٹرولیم ڈویژن کا کہناتھا کہ گیس کی ضروریات پوری کرنے کے لئے اضافی ایل این جی منگوائے جائے گی، موسم سرما میں گیس بحران سے نمٹنے کے لیے 5 ترجیحات طے کر لی گیئں، گھریلو صارفین کو گیس کی سپلائی پہلی ترجیح ہو گی،پاور پلانٹس دوسری، کمرشل صارفین تیسری ترجیح میں شامل ہیں،جنرل انڈسٹری کے لیے دسمبر جنوری اورفروری میں متبادل ایندھن استعمال کرنے کی تجویز پر غور کیا گیا ہے۔

 کھاد ،سمیٹ فیکٹریوں اور سی این جی کو اضافی گیس دستیابی کی صورت میں سپلائی دینے پر اتفاق کیا گیا ہے،ملک میں گیس کی مجموعی پیداوار 3 ارب 38 کروڑ 60 لاکھ کیوبک فٹ یومیہ ہےحکومت 85 کروڑ کیوبک فٹ یومیہ ایل این جی درآمد کر رہی ہےسوئی گیس کمپنیوں کی تجاویز پیٹرولیم ڈویژن منظوری کے لیے ای سی سی کو بھجواے گی جبکہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کی منظوری سے گیس لوڈ مینجمنٹ پلان نافذ کیا جاے گا۔