دنیا کے سست ترین ممالک کی فہرست جاری

دنیا کے سست ترین ممالک کی فہرست جاری


ویب ڈیسک: عالمی ادارہ صحت نے دنیا کے سست ترین  اور متحرک افراد والےممالک کی فہرست شائع کردی ہے۔

تاریخ گواہ ہے جس قوم نے   سستی اور کاہلی کے عادات و خصائل  کو اپنی  زندگی کے کاموں میں زیادہ ترجیح نہیں دی، وہی قومیں کامیاب ہوتی  ہیں اور کامیابی ان کے قدم چومتی ہے، جبکہ جو قومیں ان  غیر موثر سرگرمیوں کا شکار ہو جاتی ہیں وہ نہ صرف خوار ہوتی ہیں بلکہ دوسرے ممالک کی نظروں میں گر جاتی ہیں، اور سیاسی، معاشی سمیت ہر  لحاظ سے  کمزور ہو جاتی ہیں۔

ایک  ریسرچ کے مطابق   عالمی ادارہ صحت   نے حیران کن انکشافات ظاہر کیے ہیں کہ   سب سے زیادہ سست کویت میں بستے ہیں جدھر کل آبادی کے 67 فیصد  لوگ غیر متحرک  زندگی بسر کر رہے ہیں  جبکہ متحرک زندگی  بسر کرنے کا اعزاز یوگنڈا کے حصہ میں آیا ہے جہاں 5.5 فیصد  لوگ اپنی زندگی غیر متحرک بسر کر رہے ہیں۔

متحرک و غیر متحرک ممالک کی فہرست پر نظر ڈالی جائے تو کویت کے بعد سست ممالک میں امریکہ کا جزیرہ سموآ اور سعودی عرب   بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر موجود ہیں جبکہ متحرک  ممالک میں یوگنڈا کے بعد موذمبیق کا نمبر آتا ہے۔

علاوہ ازیں اس بات کا بھی پتہ چلا ہے کہ خواتین مردوں کے مقابلہ کم متحرک ہوتی ہیں، 2001 سے 2016 تک دنیا کے 168 ممالک میں سے 358 سروے کیے گیے  جس میں 1.9 ملین افراد کو شامل کیا گیا، ان افراد سے روزمرہ کے اوقات کے متعلق  معلومات لی گئیں۔