خطرناک آئس کا نشہ کراچی کی جامعات تک بھی جاپہنچا

خطرناک آئس کا نشہ کراچی کی جامعات تک بھی جاپہنچا


کراچی ( 24نیوز ) این ای ڈی یونیورسٹی کے ہا سٹل، کلاس رومز اور سیڑھیوں پر بیٹھ کر طلبہ کھلے عام نشہ کرنے لگے, یہی نہیں آئس ڈیلرز یونیورسٹی کے گیٹ پر آکر طلباء کو زہر فروخت کرنے لگے، 24 نیوز کی ٹیم نے مکروہ دھندے سے پردہ اٹھا دیا۔

کراچی کی جامعہ این ای ڈی کے طلباء منشیات کے چنگل میں پھنس گئے، انجئینرنگ کرنے والے طلباآئس جیسے مہلک نشہ میں مبتلا ہوگئے۔ این ای ڈی یونیورسٹی کے انجنیئرز کلاسز رومز ، مختلف شعبہ جات کی سیڑھیاں اور ہاسٹلز میں آئس کے نشے کا لطف لینے لگے اور اس کام میں لڑکے ہی نہیں لڑکیاں بھی پیچھے نہیں۔

24 نیوز کی ٹیم کے اسٹنگ آپریشن نے آئس کے دھوئیں میں چھپے یونیورسٹی میں جاری مکروہ دھندے سے پردہ اٹھا دیا۔ اعظم نامی ڈیلر یونیورسٹی کے گیٹ پر آئس فراہم کرتا ہے جو طلباء سے صرف ایک فون کال کی دوری پر ہے۔ ڈانس پارٹی اور پوش علاقوں کے بعد یونیورسٹیز میں سراعیت کرتا آئس کا مہنگا نشہ مستقبل کے معماروں کا مستقبل روشن کرنے کے بجائے مستبل تاریک کررہا ہے۔