دودھ کی قیمت کے تعین سے متعلق سندھ ہائیکورٹ میں سماعت

دودھ کی قیمت کے تعین سے متعلق سندھ ہائیکورٹ میں سماعت


کراچی(24نیوز) دودھ کی قیمت کے تعین سے متعلق درخواست پر سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی۔ عدالت نے دودھ کی قیمت کے تعین کے اختیار سے متعلق قانونی دلائل طلب کرلئے۔ کیس کی سماعت ستائیس فروری تک ملتوی کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ کےجسٹس عقیل احمدعباسی پرمشتمل دو رکنی بینچ کی سربراہی میں دودھ کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔ عدالت میں درخواست گزار عمران شہزاد کا کہنا تھا کہ منافع خور مافیا دودھ نوے سے سو روپے فی لیٹر فروخت کررہی ہے۔

جبکہ عدالت میں ریٹیلرز کے وکیل کا کہنا تھا کہ مقررکردہ پچاسی روپے فی لیٹر فروخت کرنے میں مالی نقصان ہورہا ہے۔ قیمت اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے مقررکی گئی ہے۔ صوبائی قانون بننےکے بعد 1977کے وفاقی قانون کے تحت قیمتوں کا تعین غیر قانونی ہے۔

عدالت میں درخواست گزارعمران شہزاد کی بار بارمداخلت پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیااورکہا اگر آپ نے مزید کچھ کہا تودرخواست مسترد کردیں گے۔

عدالت نے دودھ کی قیمت کے تعین کے اختیار سے متعلق قانونی دلائل طلب کرتے ہوئے سماعت 27 فروری تک ملتوی کردی۔