قومی اسمبلی اجلاس ،ارکان کی دھواں دھار تقریریں،مراد سعید کے الزامات پر ہنگامہ



اسلام آباد(24نیوز)قومی اسمبلی کا اجلاس دوبارہ شروع کردیا گیا ہے،ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری اجلاس کی صدارت کررہے ہیں۔

شاہد خاقان عباسی نے سپیکر اسد قیصر سے معذرت کرلی

سابق وزیر اعظم  شاہد خاقان عباسی نے خطاب میں کہا کہ سپیکر کے خلاف نیب کیسز کے بیان پر معذرت چاہتا ہوں،سپیکر سندھ اسمبلی کیلئے گرفتاری کے تناظر میں بات کی تھی پنجاب اسمبلی کے سپیکر کے خلاف بھی کیسز ہیں ،سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خلاف کوئی کیس نہیں ہے، سندھ کے عوام کو کیا پیغام دیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سراج درانی کو بغیر ثبوت اور بغیر وارنٹ کیوں گرفتار کیا گیا،خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈرز جاری کیوں نہیں کئے گئے، گزارش ہے کہ آج خواجہ سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈرز جاری کر دیں تاکہ وہ اپنے حلقہ کے عوام کی نمائندگی کر سکیں، اپوزیشن ایوان میں ایشوز اٹھاتی ہے حکومت کو اپوزیشن کے ایشوز پر جواب دینا چاہیے، اس ایوان میں تین سابق اسپیکر موجود ہیں ان سے مشاورت کر لیں کہ ایوان کس طرح چلانا ہے ہمارے حلقوں کے عوام گیس بل لے کر آتے ہیں کہ ان کے ساتھ کیا ہوا یہ معاملہ میرے پاس لے آئیں میں قیمتوں کا معاملہ فوری حل کر دوں گا۔

ویڈیو دیکھیں:

روزانہ اسمبلی میں ثبوت لے کر آتا ہوں:مراد سعید

وفاقی وزیر مراد سعید نے کہا کہ  یہ کیا روایت ہے کہ شہباز شریف کو چئیرمین پی اے سی لگا دو اور پروڈکشن آرڈر جاری کر دو تو ایوان چلے گا ورنہ نہیں ،سرحد کے اس پار پاکستان کو روزانہ دھمکیاں مل رہی ہیں ایوان میں بھارتی دھمکیوں پر بات ہونی چاہیئے تھی ،کلبھوشن اس بات کا ثبوت ہے کہ بھارت یہاں دہشت گردی کرتا ہے تین مرتبہ وزیراعظم رہنے والے کا نام بھارت کے وکیل نے عالمی عدالت  میں لیا، بھارتی وکیل نے کہا کہ نواز شریف وہی کہتے ہیں جو بھارت کا موقف ہے۔شرم کی بات ہے کہ عالمی عدالت انصاف میں نوازشریف کا بیان پاکستان مخالف انداز میں چلایا گیا، بھارت نے نوازشریف کے بیان کا حوالہ دیا، بدقسمتی ہے جو تین مرتبہ پاکستان کا وزیراعظم بنا وہ بھارت میں ایک غدار کے طور پر سامنے آرہا ہے اس سے زیادہ بدقسمتی کیا ہوسکتی ہے

ہاؤس کو چلانے کے لیے قواعد ہونے چاہیے، جس طرح کی زبان استعمال ہورہی ایوان نہیں چلتا، ان سے کہیں گالم گلوچ یہاں نہیں چلی گی، میں نے جو باتیں کیں ان کا ثبوت ہے میرے پاس، میرے اس انتظار میں ہوتا ہوں کہ کوئی تو میرا جواب دیگا، روزانہ ثبوت کے کر آتا ہوں کہ ان میں سے کوئی تو چیلنج کرے۔

ویڈیو دیکھیں:

مراد سعید کی تقریر کے دوران اپوزیشن  نے ایوان میں احتجاج کیا،نوازشریف کے خلاف غداری کی بات کرنے پر اپوزیشن کا احتجاج،اپوزیشن ارکان اسمبلی سپیکرکی کرسی کے سامنے جاکر نعرے لگاتے  رہے۔

مراد سعید نے کہا کہ  اس ایوان میں کارروائی ہونی چاہیے، اس ایوان میں عوام کے مفاد کی بات ہونی چاہیے، مرتضیٰ جاوید عباسی نے مراد سعید کے خطاب کے دوران مداخلت کی ، چور کہنے پر مرتضیٰ جاوید عباسی برہم، مرتضیٰ عباسی نے مراد سعید کے جواب میں کہا کہ  تمہارا باپ چور ہوگا،  مراد سعید کے دفاع میں سیف الرحمان بھی کھڑے ہوگئے، سیف الرحمان  نے کہا کہ زبان سنبھال کے بات کریں۔

احتساب بھی ہوگا،جمہوریت بھی چلے گی:فہمیدہ مرزا

وفاقی وزیر فہمیدہ مرزا نے اپنے خطاب میں کہا کہ بی بی کہ شہادت پر انہیں سیٹیں نہیں ملیں، اب انہیں کون لایا ہے،ان کا احتساب ہوگا، جمہوریت بھی چلے گی،احتساب بھی ہوگا، ہم سب کے حقوق برابر ہیں، کشمیر کو دھمکیاں ملتی ہیں کوئی بات نہیں ہوتی، جب بھی مجھے مائیک ملتا ہے ہنگامہ شروع ہو جاتا ہے، میں بھی اپنی پارٹی کی لیڈر ہوں، میرا بھی اتنا ہی تقدس ہونا چاہیے جتنا ان کا ہے، اگر سپیکر کی،سابق سپیکر کی عزت نہیں ہوگی تو کیسے چلیگا ایوان۔

ویڈیو دیکھیں۔۔

ڈاکٹر فہمیدہ مرزا کی تقریر کے بعد سپیکر قومی اسمبلی نے پیر تک اجلاس ملتوی کردیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer