متنازع کتاب: سابق ڈی جی آئی ایس آئی اسد درانی قصور وار قرار



راولپنڈی( 24نیوز )بھارتی خفیہ ایجنسی ''را''کے سابق سربراہ کے ساتھ مل کر متنازعہ کتاب لکھنے پر سابق ڈی جی آئی ایس آئی  لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانیکو ملٹری کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی کا مرتکب ٹھہرایا گیا ہے،پاک فوج نے ان کی تمام مراعات اور  پنشنز کی سہولیات روک لی ہیں۔

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ   ملٹری کمیشن نے ''را'' کے سابق سربراہ کے ساتھ مل کر کتاب لکھنے پر جنرل(ر)اسد درانی کو قصور وار ٹھہرایا ہے،ان کی تمام مراعات اور  پنشنز کی سہولیات روک لی ہیں،انہوں نے ملٹری کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی کی ہے،ان کا نام ای سی ایل پر ہے،مزید دو افسروں کا کورٹ مارشل ہورہا ہے۔دونوں زیر حراست ہیں،کورٹ مارشل مکمل ہونے پر تفصیل سے آگاہ کیا جاءے گا۔ 

یاد رہے کہ آئی ایس آئی کے سابق سربراہ لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانی نے گزشتہ برس بھارتی خفیہ ایجنسی را کے سابق سربراہ اے ایس دلت کے ساتھ مل کر ایک متنازع کتاب 'دی سپائی کرانیکلز 'لکھی تھی جس کی اشاعت کے بعد پاکستانی فوج نے باضابطہ طور پر اس معاملے میں 'فارمل کورٹ آف انکوائری' کا حکم دے دیا تھا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے مزید بتایا کہ اس کے علاوہ مزید دو سینئر افسران جاسوسی کے الزام میں گرفتار ہیں جن کے خلاف کورٹ مارشل کارروائی کی جا رہی ہے۔ترجمان نے بتایا کہ دونوں افسران کا کوئی نیٹ ورک موجود نہیں ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer